اسرائیلی اور مراکش کے مابین فضائی سروس کا آغاز، اسرائیلی طیارہ مراکش کے لیئے روانہ ہوگیا

اسرائیلی اور مراکش کے مابین فضائی سروس کا آغاز، اسرائیلی طیارہ مراکش کے لیئے روانہ ہوگیا

اسرائیلی اور مراکش کے درمیان تعلقات معمول پرلانے کے اعلان کے بعد دونوں ملکوں میں آج 22 دسمبر سے فضائی سروس کا آغاز ہوگیا ہے، اس سلسلے میں سب سے پہلے اسرائیل سے العال فضائی کمپنی کا طیارہ رباط کے لیے روانہ ہوا۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق اسرائیلی کمپنی ‘العال’ کیہ طرف سے اتوار کے روز جاری ایک بیان میں‌کہا گیا تھا کہ اسرائیلی فضائی کمپنی کی پرواز آج منگل کو’ایل اوائی 555′ چھ گھنٹے کا فضائی سفر طے کرکے رباط پہنچے گی جو دونوں ملکوں کےدرمیان تعلقات معمول پرلانے کےبعد پہلی براہ راست پرواز ہوگی۔

خیال رہے کہ حال ہی میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مراکش اور اسرائیل کے درمیان تعلقات معمول پرلانے کا اعلان کیا تھا، ان کا کہنا تھا کہ جلد دونوں ‌ملکوں‌کی قیادت امریکا کی میزبانی میں سفارتی تعلقات کے قیام کا معاہدہ کرے گی۔

امریکی انتظامیہ کے ایک سینیر عہدیدار نے گذشتہ ہفتے انکشاف کیا تھا کہ وہائٹ ہاؤس کے مشیر جیرڈ کشنر ایک امریکی وفد کے ہمراہ اسرائیل اور مراکش کا دورہ کریں ‌گے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی وفد اسرائیلی وفد کو ساتھ لے کر مراکش جائے گا جہاں مراکشی اور اسرائیلی حکام براہ راست بات چیت کریں ‌گے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں