عرب ممالک

مزاحمتی جنگ اور صیہونی حکومت کو روکنے کے لیے عرب ممالک کی تحریک

پاک صحات مزاحمت اور صیہونی حکومت کے درمیان جنگ کو روکنے اور غزہ کی پٹی پر وحشیانہ حملوں کے خاتمے کے لیے عرب ممالک کے درمیان مشاورت اور شدید مذاکرات جاری ہیں۔

پاک صحافت نے الجزیرہ قطر کے حوالے سے بتایا ہے کہ سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے پیر کی شب اردن کے شاہ عبداللہ دوم سے فون پر بات چیت میں غزہ اور اس کے گردونواح کی خطرناک اور حساس صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

اس فون کال کے ساتھ ساتھ ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی کے ساتھ فون کال میں فلسطین کی تازہ ترین پیش رفت پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

اس کے علاوہ، سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور السیسی نے ایک فون کال میں خود کو ضبط اور سمجھداری کی اہمیت پر زور دیا۔

دوسری جانب “محمد شیعہ السودانی” نے بھی قطر کے امیر سے رابطے میں فلسطین بالخصوص غزہ کے سنگین حالات پر تبادلہ خیال کیا۔

گزشتہ روز اردن کے بادشاہ نے جمہوریہ مصر کے صدر اور عراق کے وزیر اعظم عبدالفتاح السیسی سے فلسطین کے حوالے سے ٹیلیفون پر بات چیت کی۔

انہوں نے فلسطینیوں اور صیہونی حکومت کے درمیان حالات کو نازک ہونے سے روکنے کے لیے اقدام کی اہمیت پر بھی زور دیا اور خطے کی سلامتی اور استحکام پر اس کے خطرناک نتائج سے خبردار کیا۔

مقبوضہ علاقوں میں صورتحال تشویشناک بتائی جاتی ہے، فلسطینی وزارت صحت کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق غزہ اور اس کے اطراف میں صیہونی حکومت کے ہمہ گیر حملوں میں 687 افراد شہید ہوچکے ہیں، جن میں سے 140 بچے ہیں۔ اور 105 خواتین ہیں۔

اس رپورٹ کے مطابق غزہ کی پٹی پر صیہونی حکومت کے حملوں میں زخمی ہونے والوں کی تعداد بھی 3726 تک پہنچ گئی ہے جن میں سے 10 فیصد بچے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

گیلنٹ

گیلنٹ: اسرائیل نے گزشتہ 75 سالوں میں ایسی جنگ نہیں دیکھی

پاک صحافت صیہونی حکومت کے وزیر جنگ یوف گیلنٹ نے غزہ کی جنگ میں اسرائیلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے