لاشیں

امریکہ نے ویٹو کر دیا

پاک صحافت امریکہ نے آج ایک بار پھر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں غزہ کی پٹی کے لوگوں کو انسانی امداد کی فراہمی کے لیے جنگ بندی کا مطالبہ کرنے والی قرارداد کی منظوری کو ویٹو کر دیا۔

اس امریکی اقدام کے جواب میں اقوام متحدہ میں روس کے سفیر نے کہا کہ ہمارے امریکی اتحادی غزہ کی پٹی کے حوالے سے دوہرا معیار اپنا رہے ہیں اور جو بھی غزہ کی پٹی میں جنگ بندی پر مبنی ہماری قرارداد کی مخالفت کرتا ہے وہ اس کے خلاف ہے۔ غزہ کی پٹی اس کی ذمہ دار ہے۔

اس قرارداد کا مسودہ برازیل کی طرف سے پیش کیا گیا تھا اور گزشتہ دو دنوں میں اس میں دو بار تاخیر ہوئی تھی۔ سلامتی کونسل میں پیش کی گئی قرارداد کے حق میں 12 ارکان نے ووٹ دیا جب کہ برطانیہ نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا۔ امریکہ نے اس قرارداد کو پاس ہونے سے روکنے کے لیے ویٹو کر دیا۔

یہ معلوم ہے کہ اسرائیل کے خلاف قراردادوں کو روکنے میں امریکہ کا ماضی پرانا ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے غزہ کی پٹی کے لوگوں کو انسانی امداد فراہم کرنے کے لیے فوری جنگ بندی اور قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا۔ ابھی چند روز قبل روس کی جانب سے لیگ آف نیشنز میں ایک تجویز پیش کی گئی تھی لیکن وہ بھی منظور نہ ہو سکی۔ اس قرارداد میں فوری طور پر جنگ بند کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا تھا۔ اس تجویز کے حق میں پانچ اور مخالفت میں چار ووٹ پڑے اور چھ نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا۔

یہ بھی پڑھیں

نیوزیلینڈ

نیوزی لینڈ نے اسرائیل کے جرائم سے منسلک حماس کے اثاثے منجمد کر دیے

پاک صحافت نیوزی لینڈ نے فلسطین کے خلاف مغربی پالیسیوں کے مطابق اور غزہ میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے