فلسطین کی آزادی کے بنیادی اصولوں پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا: اسماعیل ہنیہ

فلسطین کی آزادی کے بنیادی اصولوں پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا: اسماعیل ہنیہ

غزہ (پاک صحافت) اسلامی تحریک مزاحمت حماس کے سیاسی شعبے کے سربراہ اسماعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ ان کی جماعت فلسطین کی آزادی کے لیے طے شدہ تین بنیادی اصولوں پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

ان کا کہنا ہے کہ فلسطین کی آزادی کے لیے مسلح اور جامع مزاحمت، ارض فلسطین کی آزادی میں کسی افراط وتفریط اور فلسطینی پناہ گزینوں کے حق واپسی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق اسماعیل ہنیہ نے ان خیالات کا اظہار پاکستان میں فلسطینی قوم سے اظہار یکجہتی کے لیے منعقدہ ریلی سے ٹیلفونک خطاب میں کیا۔

انہوں ‌نے کہا کہ حماس قابض صہیونی ریاست کے خلاف ہر سطح پر جامع مزاحمت جاری رکھے گی، ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ فلسطین صرف فلسطینیوں کا نہیں بلکہ عرب دنیا، مسلمان ممالک اور پوری انسانیت کا مسئلہ ہے۔

جمعرات کے روز کراچی میں منعقدہ ملین مارچ سے خطاب میں اسماعیل ہنیہ نے فلسطینی قوم کے حقوق کی حمایت کے حوالے سے پاکستانی قوم اور قیادت کی مساعی اور موقف کو سراہا، انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم نے ہمیشہ مظلوم فلسطینی قوم کا ساتھ دیا ہے، فلسطینی بھی پاکستانیوں کی اس دیرینہ ہمدردی اور یکجہتی پر پاکستان کے شکر گذار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عالمی استعماری طاقتیں مسلمانوں کی قوت کو منتشر کرنے کے انہیں تقسیم کرنے کی سازش کررہی ہیں، ان کا کہنا تھا کہ حماس قضیہ فلسطین کو عرب، مسلمان اور انسانیت کی بنیاد پر کام کرنے والے دائروں میں واپس لائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں منعقدہ یہ ملین مارچ اس بات کا ثبوت ہے کہ پاکستانی قوم فلسطینیوں کی پشت پر کھڑی ہے، انہوں‌نے کہا کہ فلسطینی قوم کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے میں پاکستان نے ہمیشہ مثبت کردار ادا کیا اور ہر فورم پر فلسطینیوں کے حقوق اور دیرینہ مطالبات کی حمایت کی ہے۔

انہوں نے مسئلہ فلسطین کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان کے جرات مندانہ اور اصولی موقف کو سراہا اور کہا کہ سلامتی کونسل میں عمران خان نے فلسطینی قوم کے حقوق کا پوری جرات کے ساتھ مقدمہ پیش کیا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں