امریکہ کے امتیازی رویے کی ایک بار پھر مذمت کی

بائکاٹ

پاک صحافت کیوبا، نکاراگوا اور وینزویلا کے حوالے سے امریکہ کی طرف سے اختیار کیے گئے امتیازی رویوں کی مذمت کی جا رہی ہے۔

لاطینی امریکہ کے دس ممالک نے کیوبا، وینزویلا اور نکاراگوا کو لاس اینجلس اجلاس میں شرکت سے روکنے پر امریکہ کی شدید مذمت کی ہے۔ ان ممالک نے امریکہ کی پالیسی کو امتیازی قرار دیا ہے۔

امریکی براعظم کے ممالک کا سربراہی اجلاس 6 سے 10 جون تک لاس اینجلس میں ہونے جا رہا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ کچھ لاطینی امریکی ممالک کو اس میں مجبور نہیں کیا جا رہا ہے۔ "البا” نامی دس ملکی تنظیم نے جمعے کو کیوبا کے دارالحکومت میں ایک بیان جاری کیا جس میں لاس اینجلس اجلاس سے متعلق امریکی رویے پر تنقید کی گئی۔

اسے کیوبا اور وینزویلا نے 2004 میں تشکیل دیا تھا۔ البا کی تشکیل کا بنیادی مقصد یورپ پر لاطینی امریکی ممالک کے انحصار کو کم کرنا تھا۔ وینزویلا کے صدر مادورو نے اپنے ایک خطاب میں کہا ہے کہ لاس اینجلس میں آئندہ ہونے والی کانفرنس کا اہتمام نہیں کیا گیا ہے۔ روئٹرز کے مطابق وائٹ ہاؤس اور امریکی محکمہ خارجہ نے اس پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

دوسری جانب میکسیکو، ارجنٹائن، بولیویا، چلی، گواتمالا اور ہونڈوراس کے صدور پہلے ہی دھمکی دے چکے ہیں کہ اگر کچھ لاطینی امریکی ممالک کو آئندہ اجلاس میں مدعو نہ کیا گیا تو وہ اجلاس کا بائیکاٹ کر دیں گے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں