یہ قیامت تک الٹے بھی لٹک جائیں میرے خلاف کرپشن ثابت نہیں کر سکتے، شہباز شریف کا دعویٰ

وزیراعظم شہباز شریف

لاہور (پاک صحافت)  پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر وقومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کرپشن کیسز سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر یہ قیامت تک الٹے بھی لٹکے رہیں تب بھی میرے خلاف کرپشن ثابت نہیں کرسکتے۔ خیال رہے کہ احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نےشہباز شریف فیملی منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کی، شہباز شریف کے وکیل امجد پرویز طبیعت ناسازی کے باعث پیش نہیں ہو سکے ۔

تفصیلات کے مطاق عدالت نے ملزمان کی حاضری مکمل کرنے کے بعد مقدمہ کے گواہ بلال ضمیر آفیسر ایف بی آر کا بیان ریکارڈ کیا،عدالت نے آئندہ سماعت پر گواہ بلال ضمیر اور محمد شریف کو جرح کے لیے پابند کرتے ہوئے سماعت 26 جنوری تک ملتوی کردی۔ ذرائع کے مطابق شہباز شریف نے عدالت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ انہیں میڈیکل بورڈ نے رپورٹس مہیا نہیں کیں، جس پر عدالت نے کہا کہ اس حوالے سے عدالت حکم جاری کر دے گی۔

واضح رہے کہ قائد حزب اختلاف کا مزید کہنا تھا کہ یہ قیامت تک الٹے بھی لٹک جائیں میرے خلاف کرپشن ثابت نہیں کر سکتے، میرے خلاف 2019 میں لندن میں خبر چھپوائی گئی کہ پانچ سو ملین پاؤنڈ کی جو گرانٹ پاکستان میں پنجاب حکومت کو تعلیم اور صحت کے لیے دی گئی اس میں خرد برد ہوئی، برطانوی حکومت نے اس خبر کو غلط قرار دیا،یہ جس منصوبے کو دیکھیں گے انہیں وہاں بچت نظر آئے گی۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں