کشمیر دوطرفہ نہیں عالمی مسئلہ ہے:پاک مندوب برائے اقوام متحدہ

کشمیر دوطرفہ نہیں عالمی مسئلہ ہے

اسلام آباد(پاک صحافت) پاکستان نے عالمی برادری کو یاد دلایا ہے کہ کشمیر صرف ہندوستان اور پاکستان کے مابین علاقائی تنازعہ نہیں ہے ، یہ بنیادی طور پر اس بات پر ہے کہ کشمیری عوام کیا چاہتے ہیں۔یہ کشمیری عوام کی روح سے متعلق تنازعہ ہے۔

اقوام متحدہ میں 1949 میں اقوام متحدہ کی قرارداد کے موقع پر ایک ویبنار سے خطاب کرتے ہوئے اقوام متحدہ میں پاکستان کے سفیر منیر اکرم نے عالمی ادارہ پر زور دیا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام اپنے حق خودارادیت کا استعمال کریں۔

انہوں نے کہا کہ تنازعہ کشمیر صرف ایک علاقائی تنازعہ نہیں ہے۔ یہ تنازعہ ہے جس میں کشمیری عوام شامل ہیں۔ یہ کشمیری عوام کی روح سے متعلق تنازعہ ہے۔سفیر اکرم نے ان نکات پر بھی روشنی ڈالی جن پر عمومی اتفاق ہے۔ “ہم سب کشمیریوں کی جدوجہد کے جواز پر متفق ہیں۔ ہم سب انسانی حقوق کی بڑے پیمانے پر خلاف ورزیوں پر متفق ہیں ، جو گذشتہ برسوں اور خاص طور پر حالیہ عرصے میں کشمیر میں رونما ہوا ہےاور ہم سب کشمیریوں کی بہادری اور لگن پر بھی متفق ہیں جن کی تیسری نسل مزاحمت کے جذبے کو زندہ رکھے ہوئے ہے”۔

مزید پڑھیں: متعدد افریقی ممالک بھی مسئلہ کشمیر پر مودی حکومت کے مخالف ہیں: قریشی

تنازعہ کشمیر میں پاکستان کے اہم کردار کی نشاندہی کرتے ہوئے ، سفیر اکرم نے کہا "ثقافت ، عقیدے ، تاریخ اور تہذیب میں ، کشمیری عوام اور پاکستان کے عوام یکساں ہیں، ہر پاکستانی کشمیر کے مقصد سے وابستگی کا گہرا احساس رکھتا ہے، یہ پاکستان ہے ، جو کشمیریوں کی جدوجہد کا ریڑھ کی ہڈی ہے اور ہمیں متحد رہنا چاہئے۔

انہوں نے بتایا کہ مسئلہ کشمیر ایک بار پھر زندہ ہے کیونکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اگست 2019 کے بعد اس پر تین بار غور کیا تھا ، جب ہندوستان نے متنازعہ علاقے کو یونین کے ساتھ غیر قانونی طور پر ضم کردیا تھا اور اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل نے متعدد بار اس پر غور کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندوں نے متعدد مواقع پر کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں پر بھی روشنی ڈالی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ 18 خصوصی نمائندوں نے خطے میں بھارتی مظالم کے خلاف مشترکہ طور پر بات کی ہے اور اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ہائی کمشنر نے دو رپورٹیں جاری کیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں