بلاول بھٹو

پاکستانی عوام آج تک ڈکٹیٹر ضیاءالحق کی سوچ اور باقیات سے نبرد آزما ہیں۔ بلاول بھٹو

اسلام آباد (پاک صحافت) بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ گزشتہ چار دہائیوں سے پاکستانی عوام جن مسائل و مشکلات میں گرفتار ہوئی وہ ڈکٹیٹر ضیاءالحق کی پیدا کردہ تھیں، پاکستان کے عوام آج تک ڈکٹیٹر ضیاء کی سوچ اور باقیات سے نبرد آزما ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ اور پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ 5 جولائی 1977ء قومی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے۔ آج کے دن ڈکٹیٹر ضیاءالحق نے پاکستان کے پہلے منتخب وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی حکومت کا خاتمہ کیا تھا۔ پاکستان جن سیاسی، معاشی، معاشرتی بیماریوں کو جھیل رہا ہے، اس کے تانے بانے ضیاء دور سے ملتے ہیں، ضیاءالحق نے پاکستان کی سیاسی، معاشرتی زندگی میں لسانیت و فرقہ واریت کی سوچ کا زہر گھولا۔

بلاول بھٹو کا مزید کہنا ہے کہ ضیاء الحق نے جمہوریت اور وفاق پرست سیاسی جماعتوں پر زمین تنگ کر دی تھی، شہید بھٹو کو سیاسی منظر سے ہٹانے کے لیے عدالتی قتل کا اسٹیج تیار کیا گیا، ضیاء نے پیپلز پارٹی کی قیادت اور کارکنوں کو جیلوں میں ڈالا، کوڑے مارے، جلا وطن ہونے پر مجبور کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام نے ضیاء اور اس کی غاصبانہ حکومت کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں

رانا ثناءاللہ

سیاستدانوں، عدلیہ اور اسٹیبلشمنٹ کو ماضی سے نکلنا پڑے گا۔ رانا ثناءاللہ

اسلام آباد (پاک صحافت) رانا ثناءاللہ کا کہنا ہے کہ سیاستدانوں، عدلیہ اور اسٹیبلشمنٹ کو ماضی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے