مسلم لیگ (ن)کاسینیٹ انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان

مسلم لیگ (ن)کاسینٹ انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان

لاہور (پاک صحافت) حزب اختلاف کی ایک اہم جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن) نے اعلان کیا ہے کہ وہ سینیٹ انتخابات میں حصہ لے گی اور اس کے بعد اسمبلیوں سے استعفے دینے کا کوئی آپشن “وضع” کیا جائے گا۔مسلم لیگ ن نے یہ بھی کہا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں حزب اختلاف کی جماعتیں سینیٹ کے انتخابات اور ضمنی انتخابات مشترکہ طور پر لڑیں گی۔

نائب صدر مریم نواز کی زیر صدارت شریفوں کے ماڈل ٹاؤن رہائش گاہ پر منعقدہ پارٹی کے پارلیمانی بورڈ کے اجلاس کی صدارت میں ہونے والے ضمنی انتخاب کے لئے امیدواروں کے ناموں کو حتمی شکل دینے کے بعد مسلم لیگ (ن) نے اس معاملے پر ابہام کو صاف کردیا۔

مسلم لیگ (ن) کا اعلان گذشتہ ہفتے پی ڈی ایم کے صدر مولانا فضل الرحمن کے اس بیان کے بالکل برخلاف آیا ہے کہ یہ اتحاد فیصلہ کرے گا کہ سینیٹ انتخابات میں حصہ لیں گے یا نہیں ۔پی ڈی ایم نے 31 جنوری کو وزیر اعظم عمران خان کو استعفی دینے کا الٹی میٹم دے دیا ہے۔

مزید پڑھیں: مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما رانا ثناءاللہ نے حکومت اور انتطامیہ کو شدید دھمکی دے دی

اجلاس میں شریک مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اور سابق وفاقی وزیر خرم دستگیر نے کہا کہ پارٹی سینیٹ کے انتخابات میں حصہ لے گی اور اس کے بعد اسمبلیوں سے استعفی دینے سے متعلق فیصلہ لیا جائے گا۔یہ کہاگیاکہ اجلاس میں ہم نے اگلے مہینے ہونے والے ضمنی انتخابات کے لئے امیدواروں کے انتخاب پر ابتدائی گفتگو کی۔ ہم جلد ہی اپنے امیدواروں کا اعلان کریں گے۔

جب یہ پوچھا گیا کہ اگر اپوزیشن نے مارچ میں ہونے والے سینیٹ انتخابات سے قبل اسمبلیوں سے استعفی دینے کے لئے اپنے پہلے عہدے سے پیچھے ہٹ لیا ہے تو مسٹر دستگیر نے کہا "ہم اسمبلیوں سے استعفی دیں گے لیکن سینیٹ انتخابات کے بعد ہی، جب ہم یہ سمجھتے ہیں کہ اسمبلیوں سے استعفی دینے کے بعد یہ پارلیمنٹ کام نہیں کرسکتی ہے تو ہم اس کے لئے (استعفے) دیں گے۔لیکن انہوں نے واضح کیا کہ استعفے ہی بنیادی مسئلہ نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا "لانگ مارچ سب سے اہم چیز ہے اور ہم اس کے لئے عوام کو کس طرح متحرک کرتے ہیں۔”

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں