متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زاید کا انتقال، 40 روزہ سوگ کا اعلان

خلیفہ بن زائد

پاک صحفات متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زید النہیان آج انتقال کر گئے ہیں۔

رائٹرز کے مطابق متحدہ عرب امارات کی سرکاری خبر رساں ایجنسی  نے بھی اس خبر کی تصدیق کی ہے۔ ان کی عمر 73 برس تھی۔

صدر زید النہیان کی عمر 73 برس تھی اور وہ کئی دنوں سے علیل تھے۔ حکومت نے زید النہیان کے انتقال پر 40 روزہ قومی سوگ کا اعلان کیا ہے۔ اس کے علاوہ ملک کے تمام نجی اور سرکاری شعبوں میں تین دن تعطیل ہوگی۔ قومی سوگ کا اعلان دبئی میڈیا آفس نے کیا ہے۔

شیخ خلیفہ بن زید النہیان نے 3 نومبر 2004 سے ملک کے صدر اور ابوظہبی کے حکمران کا عہدہ سنبھالا۔ اس سے پہلے ان کے والد شیخ زید بن سلطان النہیان صدر تھے۔ وہ 1971 سے نومبر 2004 تک ملک کے سربراہ رہے۔ 1948 میں پیدا ہونے والے شیخ خلیفہ متحدہ عرب امارات کے دوسرے صدر اور ابوظہبی کے 16ویں حکمران تھے۔ وہ شیخ زید کے بڑے بیٹے تھے۔ شیخ خلیفہ نے اپنے دور میں متحدہ عرب امارات اور ابوظہبی کی انتظامیہ کو دوبارہ منظم کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا اور متعدد اصلاحات نافذ کیں۔ ان کے دور میں متحدہ عرب امارات نے اتنی ترقی کی کہ دوسرے ممالک کے لوگ بھی بڑی تعداد میں وہاں پہنچ گئے۔

خاص طور پر، زید النہیان نے گیس اور تیل کے شعبے میں متحدہ عرب امارات کو آگے بڑھانے میں اہم کردار ادا کیا۔ اس کے علاوہ دیگر صنعتوں نے بھی ان کے دور حکومت میں ترقی کی۔ خاص طور پر انہوں نے متحدہ عرب امارات کے شمالی علاقوں کی ترقی میں اہم کردار ادا کیا جو دوسرے حصوں کے مقابلے میں قدرے پسماندہ تھے۔ اس علاقے میں انہوں نے رہائش، تعلیم اور سماجی خدمات کے فروغ کا کام کیا۔ انہوں نے متحدہ عرب امارات میں فیڈرل نیشنل کونسل کے ارکان کے براہ راست انتخاب کا آغاز بھی کیا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں