ایران کو دھمکی دینے سے پہلے اسرائیل کو اپنی اوقات پہچاننا چاہیے: محمد اسلامی

محمد اسلامی

تہران {پاک صحافت} ایٹمی توانائی کی تنظیم کے سربراہ نے زور دیا ہے کہ اسرائیل کو ایران کی جوہری تنصیبات پر حملے کی دھمکی دینے سے پہلے خود کو تیار کرنا چاہیے۔

محمد اسلامی نے یمن کے المسیرہ ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایران نے اپنی قومی حکمت عملی کے تحت جوہری ہتھیار بنانے کی نہ تو کوشش کی ہے اور نہ ہی آگے بڑھے گا اور یہ کہ ملک ایٹمی توانائی کی بین الاقوامی ایجنسی کے قوانین کے مطابق آگے بڑھ رہا ہے۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ ایران کی جوہری تنصیبات کے معائنے سے ظاہر ہوتا ہے کہ ایران کے جوہری پروگرام میں کوئی تعصب نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی سلطنت یہ سمجھ رہی ہے کہ ایران کے ایٹمی سائنسدانوں کو قتل کرنے سے اسلامی انقلاب کو نقصان پہنچ سکتا ہے لیکن صورتحال اس کے بالکل برعکس ہے۔

ایران کی ایٹمی توانائی ایجنسی کے سربراہ نے کہا کہ یہ کام نہ صرف ایران کے ایٹمی پروگرام کو کمزور کرنے کا باعث بنا ہے بلکہ ایران کے پرامن پروگراموں کو تقویت اور توسیع کا باعث بھی بنا ہے۔ انہوں نے جوہری معاہدے کے فریقین پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جوہری معاہدے کے فریقوں نے اپنے وعدوں پر عمل نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ ویانا میں ہونے والے جوہری مذاکرات جوہری معاہدے کے فریقین کی طرف سے اپنے وعدوں کی پاسداری کے بارے میں ہیں نہ کہ ایران کے پرامن جوہری پروگرام کے بارے میں۔

خیال رہے کہ ایران کا جوہری پروگرام مکمل طور پر پرامن ہے اور اس بات کی تصدیق جوہری توانائی کے بین الاقوامی ادارے آئی اے ای اے نے متعدد بار اپنی رپورٹوں میں کی ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں