22 C
Pakistan
اتوار, ستمبر 26, 2021

صہیونی حکومت نے غزہ کی پٹی میں اپکسپائر کورونا ویکسین پہنچائی

غزہ {پاک صحافت} غزہ کی وزارت صحت نے اعلان کیا کہ تل ابیب نے رام اللہ سے بھیجی گئی ویکسین کی 50 ہزار ڈوز خراب حالت میں محفوظ کر رکھی ہیں اور خراب ہونے کے بعد اسے غزہ پہنچا دیا ہے۔

انٹرنیشنل گروپ آف کلین نیوز ایجنسی کے مطابق ، غزہ کی پٹی کی وزارت صحت نے پیر کی شام ایک بیان میں کہا کہ تل ابیب نے کورونا ویکسین کی 50 ہزار ڈوز ضائع کر دی ہیں۔

عرب 48 نیوز ویب سائٹ کے مطابق ، غزہ کی پٹی کی وزارت صحت نے وضاحت کی کہ جمعرات کو وزارت صحت کے گوداموں سے غزہ کی پٹی پر 50 ہزار ڈوز سپوتنک لائٹ ویکسین کی بھیجی گئی۔

بیان کے مطابق ، ویکسین ، جو “کرم ابو سالم” کراسنگ (صہیونی حکومت کے کنٹرول میں) کے ذریعے غزہ کی پٹی میں داخل ہوئے ، ان کی حفاظت اور معیار کو یقینی بنانے کے لیے ٹیسٹ کیے گئے۔

غزہ کی وزارت صحت نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ جسم سخت اقدامات کے تحت ویکسین کی جانچ کر رہا ہے ، اعلان کیا کہ اس نے ویکسین گائیڈ کے مطابق تمام 50،000 خوراکیں ختم کر دی ہیں۔

وزارت نے تل ابیب کو ویکسینوں کی ناکامی کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا کہ صیہونی حکومت نے ویکسین کو صحیح وقت پر داخل ہونے سے روکنے اور نامناسب حالات میں چھوڑنے کی وجہ سے ناکامی کا باعث بنا۔

غزہ کی وزارت صحت نے ایک بیان میں کہا ہے کہ محصور علاقے میں کورونا کی تیسری لہر میں مرنے والوں میں 93 فیصد وہ لوگ ہیں جنہیں ویکسین نہیں دی گئی تھی۔

غزہ کی وزارت صحت کے ایک بیان کے مطابق ، کل غزہ کی پٹی میں کورونا وائرس سے آٹھ افراد ہلاک ہوئے ، اور مزید 1،437 افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے۔

غزہ میں وبا کے آغاز سے اب تک مرنے والوں کی کل تعداد 1،228 تک پہنچ گئی ہے ، جبکہ اب تک مزید 14،7368 افراد اس وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔

عبرانی زبان کے ذرائع نے پہلے اطلاع دی ہے کہ تل ابیب فلسطینی اتھارٹی کو جلد ویکسین بھیجنے کا ارادہ رکھتا ہے۔

اس خبر کے بعد فلسطینی اتھارٹی نے ایک بیان میں اعلان کیا کہ اس نے تل ابیب سے ویکسین وصول کرنے کا معاہدہ منسوخ کر دیا ہے۔

Related Articles

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

four × 5 =

Latest Articles