عراق کا امن اور استحکام خطے کی سلامتی کو متاثر کرتا ہے: کاظمی

مصطفی الکاظمی

بغداد {پاک صحافت} عراقی وزیر اعظم نے کہا کہ ان کے ملک کا امن و استحکام خطے کو اسی طرح متاثر کرتا ہے جس طرح بین الاقوامی معاہدوں پر عمل پیرا ہونے کے بغیر علاقائی امن قائم نہیں ہوسکتا۔

مصطفیٰ الکاظمی نے جمعہ کے روز برسلز میں نیٹو کے اجلاس میں کہا کہ ان کی حکومت عراق کو علاقائی اور بین الاقوامی تنازعات سے دور رکھنے کے لئے کوششیں کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نہیں چاہتے کہ عراق کسی بھی طرح کے علاقائی یا بین الاقوامی تنازعہ کا حصہ بنے۔عراق کے وزیر اعظم نے کہا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ ملک کی سرزمین کو اپنے ہمسایہ ممالک کے خلاف حملوں کے لئے استعمال نہ ہونے دیں۔

انہوں نے دہشت گردی کو تباہ کن قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ دہشت گردی جو عراق کے اندر مساجد ، گرجا گھروں ، اسکولوں ، بازاروں اور اسپتالوں پر حملہ کرکے بے گناہ لوگوں کو ہلاک کررہی ہے جب کہ دہشت گردی دنیا کے ممالک کو بھی نشانہ بنارہی ہے۔

بسرالز کے دورے سے قبل عراقی وزیر اعظم کے دفتر نے اعلان کیا تھا کہ مصطفی کاظمی کے اس دورے کا مقصد بغداد اور یوروپی یونین کے مابین تعاون بڑھانا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں