آیرلینڈ

آئرلینڈ: اسرائیل نے غزہ میں بین الاقوامی انسانی قانون کی خلاف ورزی کی ہے

پاک صحافت آئرلینڈ کے وزیر خارجہ نے غزہ جنگ کے شہداء کی بڑی تعداد کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ صیہونی حکومت نے اس علاقے میں بین الاقوامی انسانی قوانین کی خلاف ورزی کی ہے۔

پاک صحافت کے مطابق، مائیکل مارٹن نے سوموار کو لکسمبرگ میں یورپی یونین کے وزرائے خارجہ کی کونسل کے اجلاس کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا: عام شہریوں کی ہلاکتوں کی تعداد افسوسناک ہے اور غزہ پر بمباری کا جاری رہنا ناقابل فہم ہے۔

صیہونی حکومت کے اپنے دفاع کے مبینہ حق کے بارے میں مغرب کے موقف کو دہراتے ہوئے انہوں نے واضح کیا کہ غزہ میں اس حکومت کا ردعمل متناسب نہیں ہے اور خواتین اور بچوں کے قتل اور غزہ کی تباہی کو جائز نہیں قرار دیا جا سکتا۔ انہوں نے مزید کہا: آئرش حکومت کا خیال ہے کہ اس علاقے میں بین الاقوامی انسانی قوانین کی خلاف ورزی کی گئی ہے۔

آئرلینڈ کے وزیر خارجہ نے کہا: اب وقت آگیا ہے کہ اسرائیل غزہ سے انخلاء کرے، اس علاقے میں جنگ بندی کی جائے، یرغمالیوں (اسرائیلی قیدیوں) کو رہا کیا جائے اور انسانی امداد جلد از جلد غزہ منتقل کی جائے۔

یہ اس وقت ہے جب صیہونی حکومت نے غزہ میں 6 ماہ سے زائد عرصے سے بڑے پیمانے پر قتل عام شروع کر رکھا ہے اور تمام گزرگاہوں کو بند کرتے ہوئے اس علاقے کو کھنڈر میں تبدیل کر دیا ہے۔

اس سے قبل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے غزہ کی پٹی میں فوری جنگ بندی کی حمایت میں ایک قرارداد منظور کی تھی۔ اس قرار داد میں تمام فریقین سے کہا گیا ہے کہ وہ رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں دشمنی کے فوری خاتمے کا احترام کریں لیکن اس قرارداد کی منظوری کے باوجود مظلوم فلسطینی عوام کے خلاف قابض حکومت کے جرائم جاری ہیں۔

اطلاعات کے مطابق 34 ہزار سے زائد فلسطینی شہید اور 76 ہزار سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

پناہ گزین

اقوام متحدہ کے اہلکار: کوئی بھی ملک مہاجرین کو اتنی خدمات فراہم نہیں کرتا جتنی ایران

پاک صحافت اقوام متحدہ کے بین الاقوامی ادارہ برائے مہاجرت کے نمائندے کے دفتر کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے