ڈالر کی الٹی گنتی شروع

جنوبی افریقہ

پاک صحافت جنوبی افریقہ کے وزیر خارجہ نے عالمی معیشت پر ڈالر کی بالادستی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

رشیاٹودے کے مطابق نالندہ پاترو کا کہنا ہے کہ عالمی معیشت پر ڈالر کے غلبہ کی وجہ سے دوسری کرنسیوں پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے۔

انہوں نے بین الاقوامی تجارت میں ڈالر کی جگہ کسی دوسری کرنسی کے استعمال کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ 2023 میں ہم عالمی معیشت سے ڈالر کے خاتمے کا مشاہدہ کریں گے۔ جنوبی افریقہ کے وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ معاملہ برکس کے رکن ممالک کے درمیان بھی چل رہا ہے۔

روس کے ساتھ تعاون پر افریقی ممالک کے خلاف امریکہ کے تعزیری اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ امریکہ کا یہ عمل بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ نالندہ کے کرداروں کے مطابق ہم ہمیشہ ڈالر کی بالادستی کے لیے پریشان رہے ہیں، اس لیے اس کا متبادل تلاش کیا جانا چاہیے۔

دنیا کے کئی ممالک جیسے چین، بھارت، ایران اور ترکی جو روس کے خلاف پابندیوں کے حق میں نہیں ہیں، ماسکو کے ساتھ مالی لین دین اور تجارت میں اپنی قومی کرنسیوں کا استعمال کر رہے ہیں۔ مغرب بالخصوص امریکا کی جانب سے روس کے خلاف وسیع پیمانے پر پابندیوں کی وجہ سے کچھ ممالک نے ڈالر پر انحصار کم کرنے کے لیے متبادل پر کام شروع کر دیا ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ کچھ عرصہ قبل روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے کہا تھا کہ یوریشیا کے ممالک اپنے تیل کی ادائیگی کے لیے ڈالر کے علاوہ کچھ اور غیر ملکی کرنسی استعمال کریں گے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں