یوکرین کا دعویٰ، روسی خفیہ ایجنسی وزیر دفاع اور انٹیلی جنس چیف کو قتل کرنا چاہتی ہے

میزائل

کیف {پاک صحافت} یوکرین کی خفیہ ایجنسی سیکیورٹی سروسز آف یوکرین نے دعویٰ کیا ہے کہ روسی خفیہ ایجنسی جی آر یو کے جاسوسوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے جو یوکرین کے وزیر دفاع اور انٹیلی جنس چیف کو قتل کرنا چاہتے تھے۔

یوکرین کی خفیہ ایجنسی نے ٹیلی گرام پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ روسی خفیہ ایجنسی کے منصوبے کو کئی مراحل پر مبنی آپریشن کے ذریعے ناکام بنایا گیا۔

بیان میں دعویٰ کیا گیا کہ روسی ایجنسی کے لیے سہولت کار کے طور پر کام کرنے والوں سے 150,000 ڈالر کا وعدہ کیا گیا تھا اور یہ ٹیم روسی فوجی جاسوسوں نے یوکرین کے اندر حملے کرنے کے مقصد سے بنائی تھی۔

روس کی جانب سے اس دعوے پر تاحال کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

روس یوکرائن کی جنگ جاری ہے اور اس جنگ کے بارے میں مغربی رویہ انتہائی متعصبانہ ہے۔ جہاں مغربی ممالک کی حکومتیں اس معاملے میں مکمل طور پر روس کو مورد الزام ٹھہرانے کی کوشش کر رہی ہیں وہیں مغربی میڈیا بھی روس کے حوالے سے منفی تصویر پیش کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

روس کو گھیرنے کے مقصد سے نیٹو کا دائرہ کار بڑھانے کی کوشش اس جنگ کی وجہ بن گئی ہے، بلکہ ماہرین کا کہنا ہے کہ نیٹو نے دراصل اس جنگ کی منصوبہ بندی پہلے سے کی تھی، اگر روس نے جنگ شروع نہ کی ہوتی تو یہ جنگ نیٹو کی ہوتی۔ کوئی اور۔ بہانے سے شروع ہوتا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں