پاکستانی ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی، ایل پی ایل چھوڑ کر اچانک وطن واپس آگئے

شاہد آفریدی

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور مایہ ناز آل راؤنڈر شاہد خان آفریدی نے اچانک لنکا پریمیئر لیگ (ایل پی ایل) ادھوری چھوڑ کر وطن واپس آنے کا اعلان کردیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹوئٹ میں شاہد آفریدی نے کہا کہ بدقسمتی سے مجھے ذاتی نوعیت کی ایک ایمرجنسی کی وجہ سے وطن واپس جانا پڑ رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ صورتحال قابو میں آنے کے فوری بعد میں ایل پی ایل میں اپنی ٹیم کا دوبارہ حصہ بن جاؤں گا’تاہم انہوں نے اپنی ٹوئٹ میں ایمرجنسی کی وضاحت نہیں کی۔

سری لنکا پریمیئر لیگ میں شاہد آفریدی، ٹیم گال گلیڈی ایٹرز کے کپتان ہیں، جبکہ سری لنکا کے بھنوکا راجہ پاکسا ٹیم کے نائب کپتان ہیں۔

خیال رہے کہ دو روز قبل لنکا پریمیئر لیگ میں کھیلے گئے میچ میں شائقین نے گال گلیڈی ایٹرز کے کپتان شاہد آفریدی کو ایک مرتبہ اسی پرانے جارحانہ مزاج میں دیکھا جس کے لیے وہ ہمیشہ سے شہرت رکھتے تھے اور انہوں نے نوجوان افغان فاسٹ باؤلر کو ان کے برے رویے پر جھاڑ دیا تھا۔

گال گلیڈی ایٹرز اور کینڈی ٹسکرز کے درمیان میچ میں ہدف کا تعاقب کرنے والی گلیڈی ایٹرز کے محمد عامر نے افغان فاسٹ باؤلر نوین الحق کو باؤنڈری ماری جس کے بعد دونوں میں تلخ کلامی ہوئی۔

اس کے بعد عامر نے 21 سالہ افغان باؤلر کو اگلے اوور میں چھکا بھی رسید کردیا تاہم ان کی یہ کاوش بھی رنگ نہ لائی اور 197 رنز کے ہدف کے تعاقب میں گال گلیڈی ایٹرز کو 25 رنز سے شکست ہو گئی۔

میچ کے اختتام پر محمد عامر اور نوین میں ایک مرتبہ سخت جملوں کا تبادلہ ہوا جس پر ٹسکرز کے کھلاڑی جارحانہ رویہ اختیار کرنے والے نوین الحق کو ایک طرف لے گئے اور معاملہ رفع دفع ہو گیا۔

کچھ دیر بعد جب دونوں ٹیموں کے کھلاڑی آپس میں مصافحہ کررہے تھے تو گلیڈی ایٹرز کے کپتان شاہد آفریدی نے سب سے انتہائی خوشگوار موڈ میں مصافحہ کیا لیکن نوین الحق کا سامنا ہوتے ہی ان کے تیور بدل گئے اور انہوں نے محمد عامر سے بدتمیزی کرنے پر افغان کرکٹر کو خوب ڈانٹا۔

شاہد آفریدی کے اس رویے کی وجہ سے میچ کا یہ خاص لمحہ ٹوئٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا اور شائقین نے قومی ٹیم کے سابق کپتان کے رویے کو خوب سراہا۔

واضح رہے کہ شاہد آفریدی کی اچھی کارکردگی کے باوجود لنکا پریمیئر لیگ میں گال گلیڈی ایٹرز کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے اور انہیں تینوں میچوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں