براڈشیٹ تحقیقاتی کمیٹی، اپوزیشن کی جانب سے جسٹس (ر) عظمت سعید کی تقرری مسترد

براڈ شیٹ سربراہ

لاہور (پاک صحافت) براڈ شیٹ کی تحقیقات کے لئے بنائی گئی حکومتی کمیٹی پر اپوزیشن جماعتوں نے اعتراض اٹھا دیئے،  پاکستان مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلز پارٹی کا کہنا ہے کہ جسٹس ریٹائرڈ  عظمت سعید اور دیگر کو کمیٹی کا ممبر بنانے کا کوئی جواز نہیں،  کیوں کہ یہ پانامہ کیس میں نواز شریف کو سزا سنانے والے ججز میں شامل تھے۔

تفصیلات کے مطابق  براڈ شیٹ کی تحقیقاتی کمیٹی سے متعلق اعتراضات اٹھاتے ہوئے  پیپلز پارٹی اور ن لیگ کہنا ہے کہ عظمت سعید سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف پاناما کیس کا فیصلہ سنانے والے ججز میں شامل تھے، جس وقت براڈ شیٹ معاہدہ کیا گیا وہ ڈپٹی پراسیکیوٹر نیب تھے، عظمت سعید شوکت خانم کے بورڈ آف گورنرز کے ممبر بھی ہیں، انہیں کمیٹی کا سربراہ اور دیگر کو ممبر بنانے کا جواز نہیں۔

واضح رہے کہ دوسری جانب ن لیگ کے جاوید لطیف نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ چیئرمین قومی احتساب بیورو (نیب) کو قائمہ کمیٹی میں بلانا کمیٹی کا دائرہ اختیار ہے، شہزاد اکبر کو بھی بلائیں گے۔ دوسری جانب مریم اورنگزیب نے کہا کہ نیب بطور ادارہ براڈ شیٹ سے پاکستان کو پہنچنے والے نقصانات کا ملزم ہے۔ پیپلز پارٹی کے رہنما نیر بخاری نے کہاکہ کمیٹی سربراہ کی تعیناتی سے حکومت کی بد دیانتی سامنے آ چکی ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں