میزائیل

ایران کے خلائی اور میزائل پروگرام اسرائیل کی پریشانیوں میں اضافہ کر رہے ہیں

پاک صحافت اسرائیل کا کہنا ہے کہ ایران اپنی خلائی ٹیکنالوجی سے بین البراعظمی میزائل تیار کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

صیہونی حکام نے ایران کی میزائل طاقت کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کی خلائی ٹیکنالوجی بین البراعظمی بیلسٹک میزائل بنانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

اسرائیلی حکام نے خلائی ٹیکنالوجی میں ایران کی پیشرفت کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران اس ٹیکنالوجی کو استعمال کرتے ہوئے جوہری وار ہیڈ لے جانے کے قابل بیلسٹک میزائل بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایران اس ٹیکنالوجی کو خلائی پروگرام میں اپنے میزائلوں کے لیے بھی استعمال کر سکتا ہے۔

اسرائیلی اخبار ہاریٹز کے مطابق، اسرائیلی حکام کا کہنا ہے کہ ایران اپنے روایتی میزائلوں کی فائر پاور اور رینج کو بڑھانے کے لیے خلائی ٹیکنالوجی کا استعمال کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

اسرائیلی حکام نے اس بات پر بھی زور دیا ہے کہ ایران نے مصنوعی سیاروں کو مدار میں ڈالنے کے لیے جو دو میزائل تیار کیے ہیں وہ “ذوالجناح” اور “قائم-100” ہیں جن میں میزائلوں کی طرح انجن اور ایندھن کے ٹینک ہیں، جو لانچ کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور اس کے نتیجے میں ایران انہیں فوجی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کے لیے ٹیکنالوجی حاصل کر سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

گیلنٹ

گیلنٹ: اسرائیل نے گزشتہ 75 سالوں میں ایسی جنگ نہیں دیکھی

پاک صحافت صیہونی حکومت کے وزیر جنگ یوف گیلنٹ نے غزہ کی جنگ میں اسرائیلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے