ولی عہد سعودی

بن سلمان ایک پاگل شخص ہے، جس سے دنیا کی سلامتی کو خطرہ ہے ، سعودی خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ

ریاض {پاک صحافت} امریکی صدر جو بائیڈن کے دورہ ریاض کے تناظر میں سعودی عرب کی خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ نے کہا ہے کہ سعودی ولی عہد ذہنی مریض ہیں اس لیے وہ دنیا کی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔

غور طلب ہے کہ بائیڈن آئندہ چند دنوں میں غیر قانونی مقبوضہ علاقوں اور سعودی عرب کا دورہ کرنے والے ہیں۔

سی بی ایس سے بات کرتے ہوئے سعودی انٹیلی جنس ایجنسی کے سابق سینئر اہلکار سعد الجابری نے کہا: سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ایک ذہنی مریض، قاتل اور لامحدود سہولتوں کے مالک ہیں، اس لیے وہ دنیا کے لیے ایک بڑا خطرہ ہیں۔

الجابری نے کہا کہ وہ کسی پر رحم نہیں کرتے، کسی کے لیے کوئی جذبات نہیں رکھتے اور اپنی غلطیوں سے کبھی نہیں سیکھتے۔

سابق سعودی اہلکار نے اپنی جان کو خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ بن سلمان انہیں کسی بھی وقت قتل کر سکتے ہیں کیونکہ ان کے پاس شاہی خاندان کے راز ہیں۔

2017 سے پہلے، سعد الجابری سابق سعودی ولی عہد محمد بن نائف کے معاون اور سعودی انٹیلی جنس ایجنسی کے سربراہ تھے۔

الجبری نے کینیڈا میں پناہ لے رکھی ہے جب کہ سعودی پولیس نے ان کے بیٹے اور بیٹی کو 2020 میں گرفتار کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

اسرائیلی

ہیگ کے سابق پراسیکیوٹر نے اسرائیل کو جوابدہ ٹھہرانے کے لیے بین الاقوامی قانون کے طریقہ کار کی تشکیل پر زور دیا

پاک صحافت بین الاقوامی عدالت انصاف کے سابق پراسیکیوٹر “لوئیز مورینو-اوکومبو” نے خان یونس میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے