تشیع جنازہ

عرب دنیا کی خبر رساں ایجنسیوں اور پریس میں لاکھوں خدمت شہداء کے جنازوں کی جھلک

پاک صحافت عرب دنیا کی خبر رساں ایجنسیوں، خبر رساں اداروں اور پریس نے اپنی خبروں اور الگ الگ رپورٹوں میں اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر سید ابراہیم رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی تدفین کی ویڈیو کے ساتھ وسیع پیمانے پر کوریج کی ہے۔

لبنان کی سرکاری خبررساں ایجنسی ارنا کے مطابق تہران میں شہدائے خدمت خلق کی نماز جنازہ میں عوام، قومی و فوجی حکام اور غیر ملکی مہمانوں کی کثیر تعداد میں شرکت اور لبنانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نبیح بری کی موجودگی کا اعلان کیا۔ اس موقع پر تہران۔

احد لبنانی نیوز ویب سائٹ نے بھی اپنے صفحہ اول پر “تہران میں شہید رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی تدفین کے لیے لاکھوں لوگوں کی موجودگی” کے عنوان سے تقریب کا احاطہ کیا۔

1

اس ویب سائٹ نے اس رسم سے متعلق اپنی رپورٹ میں لبنان میں حزب اللہ کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل شیخ نعیم قاسم اور تہران میں فلسطینی اسلامی مزاحمتی تحریک (حماس) کے سیاسی دفتر کے سربراہ اسماعیل ھنیہ کی موجودگی کا بھی ذکر کیا ہے۔

لبنان کے اخبار النہار نے بھی صدارتی ہیلی کاپٹر حادثے میں شہید ہونے والوں کی نماز جنازہ کی کوریج کی اور اس تقریب میں ہزاروں افراد کی موجودگی کا اعلان کیا۔

شام

اس ملک کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے مرحوم صدر اور ان کے شہید ساتھیوں کے ہیلی کاپٹر کے حادثے کی خبروں کو کوریج دیتے ہوئے لکھا: شہید آیت اللہ ابراہیم رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی نماز جنازہ آج بدھ کو غیر ملکی سفارت کاروں کی موجودگی میں شروع ہوئی۔

اس خبر رساں ایجنسی نے مزید کہا: “اس تقریب میں شرکت کے لیے لاکھوں لوگ یونیورسٹی کے ہالوں اور آس پاس کی سڑکوں اور چوکوں میں جمع ہوئے۔”

2

شام کے ریڈیو اور ٹیلی ویژن نیٹ ورک کے اڈے نے آیت اللہ رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی تدفین کی تقریب کی تصاویر بھی براہ راست نشر کیں۔

الجزائر

البلاد اخبار نے شہید آیت اللہ رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی تشییع جنازہ کی کوریج کرتے ہوئے فلسطینی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ کے الفاظ کو شہید صدر کے عہدوں اور فلسطین کے لیے ان کی حمایت کے بارے میں روشنی ڈالی۔

البلاد نے یہ بھی لکھا: پارلیمنٹ کے اسپیکر ابراہیم بوغالی جمہوریہ الجزائر کے صدر کی جانب سے آیت اللہ رئیسی کی یاد میں منعقدہ تقریب میں شرکت کر رہے ہیں۔

3

الجھموریہ، الشروق، الشعب، الوسط، اخبارالیوم اور الخبر کے اخبارات اور اڈوں نے بھی اپنی خبروں اور رپورٹوں میں اس تقریب کا احاطہ کیا۔

مصر

الوفد مسر اخبار نے آج بدھ کے روز لکھا: تہران میں شہید صدر کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔

4

الشرق، الوطن، الدتور، النہار، المصری الیووم، الاحرام، المصریون اور الاصابہ مصر کے دیگر ذرائع ابلاغ تھے جنہوں نے اس واقعہ کی کوریج کی۔

عراق

وطن نیوز ایجنسی، براتہ، المعلمہ اور دیگر عراقی پرنٹ میڈیا اور نیوز ایجنسیوں نے بھی الگ الگ ویڈیو اور تصاویر شائع کرکے اور تہران میں اپنے ماہرین اور نامہ نگاروں سے انٹرویو کرکے شہداء کی تدفین کی تقریب کو کور کیا۔

اس دوران براتھا نیوز ایجنسی نے شہداء رئیسی اور امیر عبداللہیان کی ذاتی اور سیاسی زندگیوں کا جائزہ لیا اور ان کی سماجی اور سیاسی زندگی کے مختلف ادوار کا جائزہ لیا۔

ان ذرائع ابلاغ نے عراقی وزیر اعظم محمد شیعہ السوڈانی کی سپریم لیڈر کے ساتھ ملاقات کو بھی کور کیا۔

فلسطین

فلسطینی اخبار العالم نے بھی اپنی رپورٹ میں تہران میں شہداء کی نماز جنازہ اور تدفین میں ہزاروں ایرانی شہریوں کی شرکت کی خبر دی ہے۔

5

اس اخبار نے صدر اور ان کے ساتھیوں کے لیے حادثے کے بعد تمام ایرانی عوام کی یکجہتی کا بھی ذکر کیا۔

6

عرب 48 نیوز سائٹ، جو فلسطین اور 1948 کے مقبوضہ علاقوں کی خبروں کا احاطہ کرتی ہے، نے بھی شہداء کی تدفین کی تقریب کا احاطہ کیا۔

اس میڈیا نے مسئلہ فلسطین کے دفاع میں شہید صدر اور وزیر خارجہ کے موقف کا حوالہ دیا اور اس سانحے کے بعد فلسطینی مزاحمتی گروہوں کی جانب سے ہمدردی کے پیغامات شائع کیے۔

یمن

یمن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے تصاویر کی اشاعت کے ساتھ تہران میں خدمت شہداء کی نماز جنازہ کی بھی کوریج کی۔

7

“26 ستمبر” نیوز سائٹ ایک اور یمنی میڈیا تھی جس نے شہید آیت اللہ رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی نماز جنازہ کی کوریج کی اور لکھا: ایرانی شہداء کی میتوں پر دعا کی تقریب کا آغاز ایران کے سیاسی دفتر کے سربراہ اسماعیل ھنیہ کے خطاب سے ہوا۔ حماس تحریک، جو کہ فلسطینی مزاحمتی گروپ کی نمائندگی کرتی تھی، نے تقریر کی۔

“الخبر الایمانی” ویب سائیٹ نے بھی شہید آیت اللہ رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی نماز اور تدفین کی رسم کا احاطہ کیا اور لکھا: بدھ کی صبح سے ہی دسیوں ہزار ایرانی شہریوں نے اس تقریب میں شرکت کی۔

اردن

الرائے اردن کے اخبار نے بھی شہید آیت اللہ رئیسی کی یادگاری پروگراموں کی کوریج کی، اس حادثے کے بارے میں ایک رپورٹ جو ان اور ان کے ساتھیوں کی شہادت کا باعث بنی اور انتخابات کے انعقاد کے اعلاناتی پروگرام کا جائزہ لیا۔

8

عمون، السبیل، الدتور، عمان نیٹ، البوبہ اور مرایا نیوز کے خبر رساں اداروں نے بھی صدر اور ان کے ساتھیوں کی نماز جنازہ کی خبریں شائع کیں۔

کویت

کویت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے نماز اور شہداء کی تدفین کی رسم کا احاطہ کرتے ہوئے لکھا: یہ تقریب ان لاکھوں شہریوں کی موجودگی میں منعقد ہوئی جو بدھ کی صبح سے ہی تہران یونیورسٹی اور اس کے اطراف کی سڑکوں پر جمع تھے۔

9

کویت کے الانبہ اخبار نے بھی صدارتی ہیلی کاپٹر حادثے میں شہید ہونے والوں کی نماز جنازہ اور تدفین کی تقریب کی کوریج کرتے ہوئے لکھا ہے کہ آج صبح ہزاروں ایرانی عوام نے رہبر معظم کی طرف سے شہداء کی میتوں پر فاتحہ خوانی کے بعد انہیں سپرد خاک کیا۔

اس اخبار نے مزید کہا: یہ تقریب تہران میں درجنوں غیر ملکی سفارتی وفود کی موجودگی میں منعقد ہوئی اور شہید رئیسی کی تدفین جمعرات کو مشہد مقدس میں کی جائے گی۔

الرای اخبار نے بھی لکھا: تہران میں ایران کے صدر اور ان کے ساتھیوں کی نماز جنازہ میں دسیوں ہزار افراد نے شرکت کی۔

10

یہ بھی پڑھیں

فوجی

غزہ کی جنگ اپنے مقاصد کھو چکی ہے/20 سالوں میں فوج کی طاقت میں کمی

پاک صحافت صیہونی حکومت کے ریٹائرڈ جنرل اسحاق برک نے غزہ کے خلاف جنگ اپنے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے