ملاقات

عراقی وزیر اعظم سپریم لیڈر سے ملاقات میں: میں اس دکھ کی گھڑی میں دکھ بانٹنے آیا ہوں

پاک صحافت ایرانی صدر سید ابراہیم رئیسی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت پر تعزیت کے اظہار کے لیے ایران کے دورے پر آئے عراقی وزیر اعظم محمد شیعہ السوڈانی نے بدھ کے روز تہران میں رہبر معظم انقلاب اسلامی ایران سے ملاقات کی اور ان سے اظہار تشکر کیا۔ ایرانی قوم نے تعزیت کا اظہار کیا۔

اس ملاقات میں عراقی وزیر اعظم نے کہا: میں اس دکھ کی گھڑی میں آپ سے ملنے آیا ہوں تاکہ عراقی حکومت اور قوم کی جانب سے ایرانی حکومت اور قوم کے تئیں اپنی تعزیت اور افسوس کا اظہار کر سکوں۔ شہید صدر رئیسی کے بارے میں ہم جتنا بھی جانتے ہیں، وہ سچائی، دیانت، خدمت اور کوشش کی علامت تھے۔

عراق کے وزیر اعظم نے شہداء کے جلوس جنازہ میں لاکھوں لوگوں کی موجودگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا: آج میں نے ٹی وی پر جو تصویریں دیکھیں ان میں واضح پیغام تھا۔ یہ پیغام پابندیوں اور دباؤ کے باوجود اسلامی جمہوریہ میں حکام اور عوام کے درمیان مضبوط تعلقات پر مبنی ہے۔

السودانی نے مزید کہا: شہداء کے جلوس جنازہ میں لاکھوں لوگوں کی موجودگی کا دوسرا پیغام یہ ہے کہ ہمیں عوام کی خدمت کرنی چاہیے اور یہ بہت بڑا جلوس جنازہ عوام کی خدمت کا نتیجہ ہے اور عراق میں بھی ہمیں اسے بنانا چاہیے۔ اپنے لیے ایک ماڈل۔

اس ملاقات میں رہبر معظم نے عراق کے وزیر اعظم کے تعزیت کے لیے تہران کے دورے کو سراہتے ہوئے فرمایا: ہم ایک خاص شخصیت سے محروم ہو گئے ہیں۔ صدر رئیسی ایک اچھے بھائی اور قابل اور سچے افسر تھے۔

رہبر معظم نے فرمایا: آئین کے مطابق جناب مخبیر اب ایک بھاری ذمہ داری اٹھاتے ہیں اور عراقی حکومت کے ساتھ تعاون اور دوستی مستقبل میں بھی جاری رہے گی۔

یہ بھی پڑھیں

فوجی

غزہ کی جنگ اپنے مقاصد کھو چکی ہے/20 سالوں میں فوج کی طاقت میں کمی

پاک صحافت صیہونی حکومت کے ریٹائرڈ جنرل اسحاق برک نے غزہ کے خلاف جنگ اپنے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے