عرب ممالک اسرائیل کے ساتھ دوستی کے نشے میں چور، فلسطین کو دی جانے والی امداد میں شدید کمی کردی

عرب ممالک اسرائیل کے ساتھ دوستی کے نشے میں چور، فلسطین کو دی جانے والی امداد میں شدید کمی کردی

رام اللہ (پاک صحافت) عرب ممالک کی اسرائیل سے محبت اس قدر بڑھ چکی ہے اور وہ اس دوستی کے نشے میں چور ہوچکے ہیں کہ انہوں نے فلسطین کو دی جانے والی امداد میں 6 گنا کمی کردی ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق فلسطین کی وزارت خزانہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سال 2020 میں عرب ممالک نے فلسطین کو صرف 4 کروڑ ڈالر امداد فراہم کی۔ اس سے پہلے 2019 میں عربوں نے فلسطین کو 26 کروڑ 55 لاکھ ڈالر امداد دی تھی۔

فلسطین کی امداد میں سب سے زیادہ کٹوتی سعودی عرب نے کی، 2019 میں سعودی عرب نے فلسطین کو 17 کروڑ 47 لاکھ ڈالر امداد فراہم کی جو 2020 میں کم ہو کر محض 3 کروڑ 25 لاکھ ڈالر رہ گئی۔

دنیا بھر سے فلسطین کے لئے آنے والی امداد جو 2019 میں 53 کروڑ 83 لاکھ ڈالر تھی 2020 میں کم ہو کر 36 کروڑ 97 لاکھ ڈالر ہو گئی۔

چار امیر عرب ممالک کا اسرائیل کو تسلیم کرنا اور اسرائیل کے ساتھ تعلقات قائم ہونے کے بعد امداد میں کمی آرہی ہے، اس وقت فلسطینی حکومت شدید مالی بحران کا شکار ہے، سرکاری ملازموں کو تنخواہوں کی ادائیگی کے لئے فنڈز نہیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

نیوزیلینڈ

نیوزی لینڈ نے اسرائیل کے جرائم سے منسلک حماس کے اثاثے منجمد کر دیے

پاک صحافت نیوزی لینڈ نے فلسطین کے خلاف مغربی پالیسیوں کے مطابق اور غزہ میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے