نعرہ

امریکی وزیر خارجہ کی تقریر کے دوران نعرے لگنے لگے، بلنکن غصے سے لال

پاک صحافت حماس اور دہشت گرد حکومت اسرائیل کے درمیان جاری جنگ پر نہ صرف امریکہ کو بین الاقوامی سطح پر تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے بلکہ خود امریکہ کے اندر بھی بائیڈن انتظامیہ کی شدید مخالفت کی جا رہی ہے۔ ادھر غزہ میں جنگ بندی کا مطالبہ کرنے والے مظاہرین نے منگل کو سینیٹ کی سماعت کے دوران امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کے سامنے مظاہرہ کیا۔ بہت سے لوگ ہجوم میں کھڑے تھے اور بار بار چیخ رہے تھے – “اب فائر کرو!”

موصولہ اطلاعات کے مطابق امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن اس وقت غصے سے لال ہو گئے جب وہ سینیٹ کمیٹی کے اجلاس میں تقریر کر رہے تھے۔ بلنکن اور امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن وائٹ ہاؤس کی 106 بلین ڈالر کی قومی سلامتی کی فنڈنگ ​​کی درخواست کے بارے میں گواہی دے رہے تھے۔ اس میں حماس کے خلاف اسرائیل کی فوجی کوششوں کی حمایت کے لیے 14.3 بلین ڈالر شامل ہیں۔ مظاہرین ایک ایک کر کے اٹھ کھڑے ہوئے اور مظاہرہ کرنے لگے۔ سیکرٹری خارجہ ڈٹ گئے اور ارکان پارلیمنٹ کئی بار سماعت ملتوی کرنے پر مجبور ہوئے۔ تاہم کیپیٹل پولیس نے مظاہرین کو فوری طور پر کمرے سے باہر نکال دیا۔ پولیس نے کہا کہ انہوں نے ڈرکسن سینیٹ آفس بلڈنگ کے اندر غیر قانونی طور پر احتجاج کرنے پر 12 افراد کو گرفتار کیا۔ کارروائی میں خلل ڈالنے والوں میں سے کچھ کا تعلق جنگ مخالف گروپ کوڈ پنک سے تھا، جس نے امریکہ سے یوکرین کو ہتھیار بھیجنا بند کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

اس دوران بہت سے مظاہرین نے گلابی رنگ کے کپڑے پہنے ہوئے تھے اور ان کے ہاتھوں میں پلے کارڈ تھے جن پر لکھا تھا ’’غزہ کا محاصرہ نہ کرو‘‘۔ انہوں نے امریکہ سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل کو رقوم بھیجنا بند کرے۔ کوڈ پنک نے تصدیق کی کہ اس کے کچھ ارکان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ گروپ نے بتایا کہ کچھ لوگوں نے خون کی علامت کے لیے اپنے ہاتھوں کو سرخ رنگ کر رکھا تھا۔ بلنکن نے اپنے بیان کے آخر میں مظاہرین کے احتجاج کا بھی جواب دیا۔ انہوں نے کہا- ہم سب شہریوں کی جانوں کے تحفظ کے لیے پرعزم ہیں۔ اس درد کو ہم سب جانتے ہیں۔” تاہم انہوں نے کہا کہ یہ ضروری ہے کہ امریکہ اپنے اتحادیوں کے ساتھ کھڑا ہو۔ ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ بلنکن اور آسٹن صدر جو بائیڈن کے قومی سلامتی پیکیج کی حمایت کے لیے قانون سازوں سے لابنگ کر رہے ہیں، جس میں یوکرین کے دفاع کے لیے 61.4 بلین ڈالر، انسانی امداد کے لیے 9.2 بلین ڈالر، انڈو پیسفک سکیورٹی کے لیے 2 بلین ڈالر شامل ہیں، بشمول جنوبی کے لیے 10.9 بلین ڈالر۔ سرحدی سلامتی اور نقل مکانی کے مسائل۔ ایوانِ نمائندگان کے منتخب اسپیکر مائیک جانسن نے قانون سازی کی تجویز پیش کی ہے جس کے تحت اسرائیل کو ہنگامی فنڈز میں 14.3 بلین ڈالر بھیجے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں

نیوزیلینڈ

نیوزی لینڈ نے اسرائیل کے جرائم سے منسلک حماس کے اثاثے منجمد کر دیے

پاک صحافت نیوزی لینڈ نے فلسطین کے خلاف مغربی پالیسیوں کے مطابق اور غزہ میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے