روس اور امریکہ آمنے سامنے، دونوں نے خبردار کر دیا

روس اور امریکہ

پاک صحافت لتھوانیا کے معاملے پر روس اور امریکہ آمنے سامنے آ گئے ہیں۔

روس نے نیٹو کے رکن لتھوانیا سے فوری طور پر معاندانہ پابندیاں ہٹانے کا مطالبہ کیا ہے اور امریکہ نے کہا ہے کہ وہ لتھوانیا کے ساتھ کھڑا ہے۔

روس نے لتھوانیا سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کیلینن گراڈ پر عائد کھلی مخالفانہ پابندیاں فوری طور پر اٹھائے۔ روس کی جانب سے یہ انتباہ ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب لیتھوانیا نے روس کے جوہری فوجی قلعے کیلینن گراڈ تک ریل کے ذریعے سفر کرنے والے سامان پر پابندی عائد کر دی ہے۔

لیتھوانیا کے اس اقدام پر روس نے خبردار کیا ہے اور امریکہ نے کہا ہے کہ وہ لتھوانیا کے ساتھ کھڑا ہے۔ امریکا نے روس کو یہ بھی یاد دلایا ہے کہ نیٹو کے کسی بھی رکن ملک پر حملہ امریکا پر حملہ تصور کیا جائے گا۔

روسی شہر کالینن گراڈ جو یورپی یونین اور نیٹو ممالک کے درمیان واقع ہے، ریل کے ذریعے سامان منگوایا جاتا ہے۔ کیلینن گراڈ کی گیس کی سپلائی بھی لتھوانیا سے ہوتی ہے۔ لتھوانیا نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ وہ روسی پابندیوں کی فہرست میں کیلنین گراڈ تک ریل کی ترسیل پر پابندی لگا رہا ہے، جس سے لتھوانیا ناراض ہے۔

روس نے کہا ہے کہ اگر کیلنین گراڈ تک سامان کی نقل و حرکت مکمل طور پر دوبارہ شروع نہیں کی گئی تو روس کو اپنے قومی مفادات کے دفاع کا پورا حق حاصل ہے۔

روس نے لیتھوانیا کے اس اقدام کو اشتعال انگیز اور معاندانہ قرار دیا ہے۔ روسی صدارتی دفتر نے لیتھوانیا کے اس فیصلے کو ہر چیز کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ روس نے اس اقدام کو بین الاقوامی قوانین کے تحت غیر قانونی قرار دیتے ہوئے لتھوانیا کے سفیر کو طلب کر لیا۔

لتھوانیا کی وزیر اعظم  نے کہا ہے کہ ایک ایسے ملک سے بین الاقوامی معاہدوں کی مبینہ خلاف ورزیوں کے بارے میں بیان بازی سننا ستم ظریفی ہے جس نے شاید ہر ایک بین الاقوامی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ کیلینن گراڈ کی کوئی ناکہ بندی نہیں ہے۔ لتھوانیا صرف یورپی یونین کی طرف سے عائد پابندیوں پر عمل درآمد کر رہا ہے۔

کیلینن گراڈ کو روس کا ایٹمی قلعہ سمجھا جاتا ہے۔ لتھوانیا کے اس اقدام سے کیلنین گراڈ تک پہنچنے والے سامان میں 50 فیصد کمی ممکن ہے۔ حال ہی میں روس نے کیلینن گراڈ میں ہی جوہری حملے کی مشق کی تھی۔ کیلینن گراڈ روسی بحریہ کے بالٹک سمندر کے علاقے کا ہیڈ کوارٹر ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں