وارنگ

غیر ملکی جہازوں کو روس کی سخت وارننگ

ماسکو {پاک صحافت} روس نے غیر قانونی طور پر اپنی سرحد میں داخل ہونے والے بحری جہازوں کو سخت وارننگ جاری کی ہے۔

ایک اعلیٰ روسی اہلکار نے غیر قانونی طور پر ان کے پانیوں میں داخل ہونے والے بحری جہازوں اور آبدوزوں کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ایسا ہوا تو انہیں اس کے نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔

روسی مسلح افواج کے آپریشنل روم کے انچارج استانیسلاو کومدوف  نے پیر کو کہا کہ ان کے ملک کو اس طرح کے بحری جہازوں اور آبدوزوں پر حملہ کرنے کا حق حاصل ہے۔

روئٹرز کے مطابق ایک امریکی آبدوز نے پہلے روس کے انتباہ کو نظر انداز کیا کہ اسے روسی پانیوں سے نکل جانا چاہیے لیکن کچھ دیر بعد وہ وہاں سے چلی گئی۔ روسی وزارت دفاع نے اس واقعے کے بعد سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

روس کی جانب سے یہ وارننگ ایسے وقت میں دی جا رہی ہے جب امریکہ اور نیٹو کے کچھ رکن ممالک روسی سرحد کے قریب گشت بڑھا رہے ہیں اور ان کے ڈرون بھی وہاں پرواز کرتے رہتے ہیں۔ کریملن نیٹو کے ان اشتعال انگیز اقدامات کے بارے میں متعدد بار خبردار کر چکا ہے۔ روس کا کہنا ہے کہ اس طرح کے اقدامات سے جھڑپیں ہوں گی جو ہم شروع نہیں کرنا چاہتے۔

خیال رہے کہ حالیہ دنوں میں یوکرین کو لے کر روس اور مغرب کے درمیان کشیدگی بہت بڑھ گئی ہے۔ مغرب کے ساتھ ساتھ امریکہ کا بھی دعویٰ ہے کہ روس کسی بھی وقت یوکرین پر حملہ کر سکتا ہے، حالانکہ روس ایک عرصے سے امریکہ کے اس دعوے کی تردید کرتا آ رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

حمایت

ایک آئرش اہلکار: فلسطین کے لیے ہماری حمایت استعمار اور قبضے کے مشترکہ تجربے پر مبنی ہے

پاک صحافت ڈبلن میں سن فین کے ایک قانون ساز، ڈیتی ڈولان نے اعلان کیا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے