آئی فون طبی ڈیوائسز سے دور رکھیں، کمپنی نے صارفین کو خبردار کردیا

ایپل کمپنی

نیو یارک (پاک صحافت) امریکی مشہور ٹیکنالوجی کمپنی ایپل نے اپنے صارفین کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپنے موبائل فونز کو طبی (میڈیکل) آلات سے دور رکھیں، کمپنی کے مطابق  آئی فون 12 سیریز کے فونز ممکنہ طور پر طبی ڈیوائسز جیسے پیس میکرز میں برقی مقناطیسی مداخلت کا باعث بن سکتے ہیں۔ خیال رہے کہ ایپل کی جانب سے آئی فون 12 سیریز کے سپورٹ دستاویز کو اپ ڈیٹ کرتے ہوئے یہ  ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ آئی فون اور میگ سیف ایسیسریز سے میڈیکل ڈیوائسز کو کم از کم 6 انچ دور رکھنا چاہیئے یا وائرلیس چارجنگ پر یہ فاصلہ 12 انچ ہونا چاہیئے۔

تفصیلات کے مطابق  امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ایپل نے اس بات پہ زور دیا  ہےکہ میگ سیف اور میگ سیف ڈو میں ریڈیو سگنل ہوتے ہیں اور ان کے مقناطسی و برقی مقناطیسی میدان میڈیکل ڈیوائسز کے افعال میں مداخلت کر سکتے ہیں۔ کمپنی کے مطابق آئی فون 12 سیریز میں دیگر ایپل اسمارٹ فونز سے زیادہ مقناطیس موجود ہے، تاہم طبی آلات کو ڈیوائسز سے کچھ دور رکھنے سے کوئی خطرہ نہیں ہوتا۔

واضح رہے کہ رواں سال کے شروع میں  ایک مضمون میں امریکا کے 3 ڈاکٹروں نے ایک آئی فون 12 اور ایک مریض میں نصب کارڈیو ویسکیولر ڈی فیبری لیٹر میں تعلق کا جائزہ لیا گیا، ٹیسٹ کے دوران یہ میڈیکل ڈیوائس سسپنڈ موڈ میں چلی گئی۔اسی ضمن میں ڈاکٹروں نے بتایا کہ طبی ڈیوائسز تیار کرنے والی کمپنیوں کی جانب سے مریضوں کو اس حوالے سے خبردار کرنا چاہیئے کیونکہ یہ اس بات کی ضمانت نہیں کہ ایپل کی جانب سے جاری سیفٹی انفارمیشن کو تمام صارفین پڑھتے ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں