سردار شاہ

وفاقی حکومت ہم پر اپنے فیصلے مسلط نہیں کرسکتی، وزیر تعلیم سندھ

کراچی (پاک صحافت) وزیر تعلیم سندھ سید سردار شاہ نے یکساں تعلیمی نظام پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت ہم پر اپنے فیصلے مسلط نہیں کرسکتی، صوبوں کا اختیار ہے وہ یکساں نصاب قبول کریں یا نہ کریں، اٹھارویں ترمیم کی روشنی میں ہمیں یہ اختیار ہے ہم اپنا فیصلہ کریں، وفاقی وزیر شفقت محمود کہتے ہیں یکساں نصاب پی ٹی آئی کے منشور کا حصہ ہے لیکن یہ آئین کا حصہ تو نہیں، پیپلزپارٹی جمہوری جماعت ہے آئین کی بالادستی پر یقین رکھتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق یکساں تعلیمی نصاب کے حکومتی فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے سردار شاہ نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کی روشنی میں ہمیں اپنا فیصلہ کرنے کا اختیار ہے، اردو اور انگریزی کے ساتھ اگر ہم سندھی پڑھانا چاہتے ہیں تو یہ ہمارا آئینی اور تاریخی حق ہے، اپنے جاری بیان میں وزیر تعلیم سندھ نے کہا کہ تعلیم مکمل صوبائی معاملہ ہے، نصاب بھی صوبے کا معاملہ ہے، یکساں نصاب کو من و ان رائج کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہے۔

واضح رہے کہ سرادار شاہ کا مزید کہنا تھا کہ سندھ کی شرکت کے بغیر یہ قومی اور یکساں نصاب نہیں ہو سکتا، ہم آج بھی کہتے ہیں کہ یکساں نصاب کے سائنسی مضامین کی اچھی چیزیں قبول کر سکتے ہیں مگر سوشل اسٹیڈیز میں ہر صوبے کی اپنی تاریخ، ثقافت اور ہیروز ہوتے ہیں، قومی ہیروز کل بھی ہمارے نصاب میں شامل تھے اور آج بھی ہیں، ہم اردو اور انگریزی کے ساتھ اگر سندھی پڑھانا چاہتے ہیں تو یہ ہمارا آئینی اور تاریخی حق ہے جس سے ہم دستبردار نہیں ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیں

پارلیمنٹ

صدارتی انتخاب کیلئے پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس 9 مارچ کو طلب

اسلام آباد (پاک صحافت) ملک میں نئے صدر کے انتخاب کے لیے پارلیمنٹ کا مشترکہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے