اگر حزب اختلاف والے راولپنڈی آئے تو ناشتہ پیش کرینگے:فوج

اگر حزب اختلاف والے راولپنڈی آئے تو ناشتہ پیش کرینگے

راولپنڈی (پاک صحافت) فوج کے میڈیا ونگ کے سربراہ نے کہا کہ حزب اختلاف پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے رہنماؤں کو چائے اور ناشتے پیش کیے جائیں گے اور اگر وہ راولپنڈی کی طرف لانگ مارچ کرنے کا فیصلہ کرتے ہیں تو ان کی دیکھ بھال کی جائے گی۔

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل بابر افتخار پی ڈی ایم کے صدر مولانا فضل الرحمن کے اس اشارے کے بارے میں پریس کانفرنس میں ایک سوال کا جواب دے رہے تھے کہ حزب اختلاف اپنی حکومت مخالف تحریک کی سمت فوج کی قیادت کی طرف موڑ سکتی ہے۔

مزید پڑھیں: مسلم لیگ (ن)کاسینیٹ انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا”مجھے ان کے پنڈی آنے کی کوئی وجہ نظر نہیں آرہی اور اگر وہ بالکل بھی آنا چاہتے ہیں تو ہم انھیں ناشتے (چائے پانی) پیش کریں گے اور ان کی دیکھ بھال کریں گے، میں اور کیا کہہ سکتا ہوں؟”۔ پی ڈی ایم کے سربراہ نے کہا تھا کہ اگر پی ٹی آئی کی حکومت نے 31 جنوری تک استعفی دینے سے انکار کردیا تو پی ڈی ایم قیادت اسلام آباد کے لانگ مارچ کا اعلان کرے گی اور اس کی تاریخ کا فیصلہ کرے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ بھی فیصلہ کرے گا کہ لانگ مارچ اسلام آباد کی طرف نکالا جائے یا راولپنڈی کی طرف۔میجر جنرل افتخار سے ایک رپورٹر نے یہ بھی پوچھا کہ کیا "فوج مخالف بیانیہ” پھیلانے والوں کے خلاف کوئی "سخت کارروائی” کی جائے گی-

آئی ایس پی آر کے سربراہ نے جواب دیا کہ جب تنقید یا الزامات لگائے جانے کی بات آتی ہے تو فوج اپنا کام کررہی ہے، صرف ایسے الزامات کا جواب دیا جاتا ہے جن کا کچھ وزن ہوتا ہے یا وہ حقائق پر مبنی ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پوری فوج اور شہدا کے اہل خانہ کے حوصلے بہت بلند ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں