خورشید شاہ

اسٹیبلشمنٹ سے مذاکرات کی خواہشمند پارٹی کیساتھ معاملات آگے نہیں بڑھ سکتے، خورشید شاہ

اسلام آباد (پاک صحافت) پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ سے مذاکرات کی خواہشمند پارٹی کے ساتھ معاملات آگے نہیں بڑھ سکتے۔ اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ معاملات کو سدھارنے کا ایک ہی راستہ ہے اور وہ پارلیمنٹ کا راستہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ عدلیہ کے ساتھ ظلم خود عدلیہ نے شروع کیا اور اب یہ عدلیہ کو ہی ختم کرنا ہو گا، جو بہتر فیصلے کرے گا وہ عوام کی نظروں میں معتبر ہو گا، اُس پر تنقید نہیں ہو گی۔ خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ ملک کی اعلیٰ ترین عدلیہ نے فردِ واحد کے حکم کو متفقہ آئین پر ترجیح دی، آمروں کو ماورائے آئین تحفظ دینے سے جمہوریت کو پنپنے کا موقع نہیں ملا۔

پیپلز پارٹی کے رہنما نے کہا کہ سب کو مل بیٹھ کر مسائل کا حل تلاش کرنا ہو گا، ہم نے پہلے پی ٹی آئی کو حکومت سازی کی دعوت دی جو انہوں نے مسترد کر دی، مسائل کے حل کے لیے سنجیدہ اور دیرپا حل ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیں

کامران ٹیسوری

گورنر سندھ کا 300 یونٹ بجلی استعمال کرنے والوں کو سولر دینے کا اعلان

کراچی (پاک صحافت) گورنر سندھ کامران ٹیسوری کا کہنا ہے کہ 300 یونٹ تک بجلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے