وزیر خارجہ

صیہونی حکومت کو سزا دینے کی کوششیں جاری رکھیں گے: ایران

پاک صحافت وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ ایران غزہ میں جرائم پر صہیونیوں کو سزا دینے کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔

حسین امیر عبداللہیان نے ہفتے کے روز لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کو غزہ میں فلسطینیوں کے خلاف ناجائز صیہونی حکومت کے جرائم کی سزا دینے کے لیے اسلامی اور غیر اسلامی ممالک کے ساتھ تعاون کرنا چاہیے۔

انہوں نے جنوبی افریقہ کی جانب سے عالمی عدالت میں صیہونی حکومت کی شکایت کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ تہران اس سلسلے میں اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔ ایرانی وزیر خارجہ عبداللہیان نے لبنانی وزیر خارجہ بوہبیب کے ساتھ ملاقات میں کہا کہ ایران خطے میں جنگ کی توسیع کا مخالف ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے برعکس ناجائز صہیونی خطے میں جنگ کی توسیع کو اپنے مفاد میں سمجھتا ہے کیونکہ یہ اپنی بقا کے لیے ضروری ہے۔

ایران کے وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ امریکہ جنگ کی توسیع کی مخالفت کے باوجود ناجائز صیہونی حکومت کی مکمل حمایت کر رہا ہے۔ امیر عبداللہیان کا کہنا ہے کہ اگر امریکا واقعی خطے میں امن میں دلچسپی رکھتا ہے تو اسے غزہ کی جنگ بند کرنی چاہیے۔ اسے صیہونی حکومت کی حمایت کو ایک طرف رکھنا ہو گا۔

وزیر خارجہ عبداللہیان نے امریکہ کے دوہرے معیار کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف واشنگٹن جنگ کے سفارتی حل پر زور دے رہا ہے اور دوسری طرف صیہونی حکومت کو ہتھیار فراہم کر رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

سعودی پرچم

سعودی عرب کے ایک عہدیدار نے اپنے ملک کے وزیر تجارت کی صیہونی حکومت کے عہدیدار سے ملاقات کی تردید کی ہے

پاک صحافت واس خبر رساں ایجنسی نے منگل کی صبح اعلان کیا ہے کہ ایک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے