غزہ

صیہونی حکومت کے جنگجوؤں کی جانب سے غزہ پر جنونی بمباری کا سلسلہ جاری ہے

پاک صحافت غزہ پر صیہونی حکومت کے وحشیانہ حملوں کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں بڑی تعداد میں لوگ شہید اور زخمی ہوئے ہیں۔

پاک صحافت کی رپورٹ کے مطابق غزہ میں المیادین کے رپورٹر نے صیہونی حکومت کے جنگجوؤں کی جانب سے شدید بمباری کے جاری رہنے کی خبر دی۔

صیہونی حکومت کے جنگجو غزہ کے جنوب میں خان یونس شہر سے مشرقی علاقوں پر شدید بمباری کر رہے ہیں۔

المیادین کے رپورٹر نے بھی غزہ پر صیہونی حکومت کے حملوں کے نتیجے میں غزہ کے رہائشیوں کی بڑی تعداد کی شہادت اور ان کی الاقصی شہداء اسپتال منتقلی کی خبر دی ہے۔

جبالیہ میں قابضین نے قتل عام جاری رکھا اور نئے سانحات کا ارتکاب کیا۔

قابضین کی جانب سے تل الزعتر اور جبالیہ کیمپ میں پناہ گزینوں کے چار اسکولوں میں ایک نیا قتل عام ہوا ہے۔

غزہ کے جنوب میں رفح میں ایک گھر پر بمباری کے نتیجے میں ایک اور شہری شہید اور زخمی ہو گئے۔

صیہونی حکومت کے جنگجوؤں نے غزہ کے مرکز میں واقع “دیر البلاح” پر اپنے نئے حملوں میں متعدد عام شہریوں کو شہید اور دیگر کو زخمی کیا۔

دریں اثناء جمعہ کے روز غزہ میں فلسطینی وزارت صحت کے ڈائریکٹر جنرل منیر البراش نے کہا: قابضین کی جانب سے بمباری کی شدت اور حد کی وجہ سے جنوبی غزہ کے ہسپتال زخمیوں کی زیادہ تعداد کو جگہ نہیں دے سکتے۔ شمالی غزہ کی پٹی سے منتقل کیا گیا۔

یہ خبر ایسے وقت میں شائع ہوئی ہے جب ایک ہفتے کی جنگ بندی سے قبل کے مرحلے میں شمالی غزہ میں ہسپتالوں اور طبی مراکز پر شدید بمباری کی وجہ سے اس علاقے کا طبی شعبہ مکمل طور پر ختم ہو گیا تھا۔

البرش نے مزید کہا: ہمیں قابض فوج کے حملے کے علاقوں کی حد تک شہداء کے اعدادوشمار کی تیاری میں مشکلات کا سامنا ہے۔

غزہ میں فلسطینی وزارت صحت کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا: حاصل شدہ اعدادوشمار کے مطابق صیہونی حکومت کی غزہ پر بمباری سے اب تک 46 ہزار سے زائد فلسطینی زخمی ہوچکے ہیں جن میں سے صرف 388 فلسطینی غزہ چھوڑنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

گیلنٹ

گیلنٹ: اسرائیل نے گزشتہ 75 سالوں میں ایسی جنگ نہیں دیکھی

پاک صحافت صیہونی حکومت کے وزیر جنگ یوف گیلنٹ نے غزہ کی جنگ میں اسرائیلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے