ایران اور عراق

جنرل سلیمانی اور مہدی المہندس کی شہادت عراق اور ایران کے تعلقات میں مضبوطی کی وجہ بنی

پاک صحافت عراقی وزیراعظم کا کہنا ہے کہ جنرل قاسم سلیمانی اور مہدی المہندس کی شہادت سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات مزید مضبوط ہوئے ہیں۔

عراق کے وزیر اعظم محمد شیعہ السوڈانی نے بدھ کی شب مقدس شہر مشہد میں کہا کہ جنرل قاسم سلیمانی اور امام رضا علیہ السلام کے روزے کے مینیجر ابو مہدی المہندس کی شہادت، احمد مراوی کی شہادت مزید تقویت کی علامت ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں خرابی پیدا ہوئی ہے۔

عراق کے وزیر اعظم نے کہا کہ شہید جنرل قاسم سلیمانی نے داعش کی تباہی اور عراق کی سلامتی کے ساتھ ساتھ پاپولر موبلائزیشن کے لیے جو خدمات انجام دی ہیں وہ دونوں ممالک کے عوام کے درمیان بھائی چارے اور دوستی کی بہترین مثال ہے اور اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ایران اور عراق کے عوام کے درمیان دوستی اور بھائی چارے کی بہترین مثال ہے۔ عراق ساتھ ہے، ایک ہی سمت میں آگے بڑھ رہے ہیں۔

عراقی وزیر اعظم نے کہا کہ دونوں قوموں ایران اور عراق کے درمیان دوستی ایک تاریخی حیثیت رکھتی ہے اور دونوں ممالک کے عوام کے درمیان تاریخی، ثقافتی اور مذہبی وابستگی دونوں ممالک کے درمیان گہرے دوستانہ تعلقات کا باعث بن سکتی ہے۔

حضرت امام رضا علیہ السلام کے روزے کے منتظم احمد ماروی نے بھی ایران اور عراق کے عوام کے درمیان دوستانہ اور دوستانہ تعلقات کو اٹوٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایران اور عراق ایک ملک ہیں اور یہ جملہ کوئی نعرہ یا دکھاوا نہیں بلکہ حقیقت ہے۔

یہ بھی پڑھیں

گیلنٹ

گیلنٹ: اسرائیل نے گزشتہ 75 سالوں میں ایسی جنگ نہیں دیکھی

پاک صحافت صیہونی حکومت کے وزیر جنگ یوف گیلنٹ نے غزہ کی جنگ میں اسرائیلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے