مسجد الاقصیٰ کے اندر کنیسٹ بنانے کا وقت: صیہونی رکن پارلیمنٹ

مسجد

تل ابیب {پاک صحافت} صہیونی پارلیمنٹ کنیسٹ کے رکن پارلیمنٹ نے کہا ہے کہ مسجد الاقصی کے اندر کنیسٹ کی تعمیر کا وقت آگیا ہے۔

خبر رساں ایجنسی فارس کی رپورٹ کے مطابق اطمر بن غفیر نے کہا ہے کہ اب وقت آگیا ہے کہ مسجد الاقصی کے اندر ایک کنیسٹ کی تعمیر کی جائے۔ انتہا پسند صہیونیوں نے گزشتہ ہفتے مسجد کے اندر چہل قدمی کا مطالبہ کیا تھا۔

صیہونی حکومت نے اسی مقصد کے ساتھ مسجد الاقصی کے بابلی مغاریبہ کو کھول دیا تھا اور بہت سے صیہونی مسجد الاقصی میں داخل ہو چکے تھے۔ میڈیا نے فلسطینیوں اور صیہونی فوجیوں کے درمیان جھڑپوں کی خبر دی اور صہیونی فوجیوں نے فلسطینیوں پر ربڑ کی گولیاں برسائیں۔

ادھر فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس نے صیہونی حکومت کو خبردار کیا ہے کہ اگر مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی بند نہ کی گئی تو ہم اپنا پیغام میزائلوں کے ذریعے پہنچائیں گے۔

مشیر المصری کے مطابق اگر صیہونی حکومت نے مسجد الاقصی کی بے حرمتی جاری رکھی اور فلیگ ریلی کو نہیں روکا تو ہمارا پیغام اس حکومت کو دوسرے طریقے سے بھیجا جائے گا۔

واضح رہے کہ بیت المقدس کے قدیم علاقے پر ناجائز قبضے کی سالگرہ کے موقع پر ہر سال 10 مئی کو صیہونی حکومت کی جانب سے ایک ریلی نکالی جاتی ہے۔ صیہونیوں کا خیال ہے کہ پورا بیت المقدس صیہونی حکومت کا دارالحکومت ہے جبکہ فلسطینیوں کا خیال ہے کہ یہ فلسطین کا دارالحکومت ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں