مذاکرات کا آٹھواں دور پابندیاں ہٹانے پر مرکوز تھا، نئے سال کی تعطیلات کے بعد معاملہ آگے بڑھے گا: باقری

علی باقری

تھران {پاک صحافت} مذاکرات کا آٹھواں دور پابندیاں ہٹانے کے معاملے پر مرکوز تھا، نئے سال کی تعطیلات کے بعد معاملہ آگے بڑھے گا: بیکری
اسلامی جمہوریہ ایران کے چیف جوہری مذاکرات کار علی باقری کنی نے کہا کہ ویانا میں ہونے والے مذاکرات کے آٹھویں دور میں پابندیاں ہٹانے پر توجہ مرکوز کی گئی۔

علی باقری نے کہا کہ بات چیت کئی بنیادوں پر تھی لیکن اہم نکتہ اسلامی جمہوریہ ایران پر عائد ظالمانہ پابندیوں کی منسوخی ہے۔

ایران کے چیف مذاکرات کار نے کہا کہ پابندیوں کے خاتمے کی تصدیق کے حوالے سے ایرانی مذاکرات کاروں اور مشترکہ کمیشن کے رابطہ کار کے درمیان بات چیت ہوئی ہے جبکہ تین یورپی ممالک کے ساتھ بھی الگ الگ بات چیت ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پابندیاں ہٹانے کے حوالے سے فریقین کے درمیان تحریر کا تبادلہ بھی ہوا، اس طرح یہ کہا جا سکتا ہے کہ مذاکرات کے آٹھویں دور کے ابتدائی دنوں میں اچھی پیش رفت ہوئی۔

ایران کی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ جب مغربی ممالک کے مذاکرات کار نئے سال کی تعطیلات گزارنے کے بعد ویانا واپس آئیں گے تو پابندیوں کے خاتمے کے معاملے پر زیادہ سنجیدگی سے بات کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک سے مذاکرات نتیجہ خیز رہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں