نیوزیلینڈ

نیوزی لینڈ نے اسرائیل کے جرائم سے منسلک حماس کے اثاثے منجمد کر دیے

پاک صحافت نیوزی لینڈ نے فلسطین کے خلاف مغربی پالیسیوں کے مطابق اور غزہ میں صیہونی حکومت کے جرائم کو نظر انداز کرتے ہوئے حماس کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا ہے۔

پاک صحافت نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ نیوزی لینڈ کی حکومت نے جمعرات کے روز 7 اکتوبر (15 اکتوبر) کو ہونے والے سرپرائز آپریشن “الاقصی طوفان” کا حوالہ دیتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ اس گھناؤنے دہشت گردانہ حملے کی ذمہ داری صیہونی حکومت پر عائد ہوتی ہے۔ حماس کے ساتھ ہے۔

اس کارروائی کے مطابق، نیوزی لینڈ میں حماس کے اثاثوں کو بلاک کر دیا گیا ہے اور “مادی مدد” ممنوع ہے۔

نیوزی لینڈ کے وزیر خارجہ ونسٹن پیٹرز نے دعویٰ کیا: ہمیں اب بھی اس جنگ کے شہریوں پر پڑنے والے اثرات پر گہری تشویش ہے اور ہم تشدد کا خاتمہ اور مشرق وسطیٰ امن عمل کی فوری بحالی چاہتے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نیوزی لینڈ نے اس سے قبل اکتوبر 2010 میں حماس کے عسکری ونگ کو دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کیا تھا اور چار بار اس کی تجدید کی تھی۔ لیکن نئے فیصلے کے مطابق حماس کو دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل کر لیا گیا ہے۔

1997 میں امریکہ، 2002 سے کینیڈا، 2003 سے یورپی یونین، مارچ 2022 سے آسٹریلیا اور نومبر 2021 سے برطانیہ نے حماس کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا ہے۔

15 اکتوبر 2023 کو فلسطینی مزاحمتی گروپوں نے فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی حکومت کے کئی عشروں کے جرائم کے جواب میں غاصب حکومت کے ٹھکانوں کے خلاف غزہ (جنوبی فلسطین) سے “الاقصی طوفان” کے نام سے ایک حیران کن آپریشن شروع کیا۔

“الاقصی طوفان” کے حیرت انگیز حملوں کا بدلہ لینے اور اپنی شکست کا ازالہ کرنے اور مزاحمتی کارروائیوں کو روکنے کے لیے اس حکومت نے غزہ کی پٹی کے راستے بند کر دیے ہیں اور اس علاقے پر بمباری کر رہی ہے۔ دوسری جانب فلسطینی مزاحمت کاروں نے زمینی لڑائی میں صیہونی فوج کو بہت زیادہ جانی و مالی نقصان پہنچایا ہے۔

غزہ کی وزارت صحت نے بدھ کے روز اپنی تازہ ترین رپورٹ میں اعلان کیا ہے کہ 7 اکتوبر 2023 سے غزہ کی پٹی پر صیہونی حکومت کے حملوں میں شہید ہونے والوں کی تعداد 29 ہزار 954 اور زخمیوں کی تعداد 70 تک پہنچ گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

امریکی صدور

سی این بی سی : “مہنگائی کا بحران”؛ ٹرمپ کے خلاف بائیڈن کی بڑی انتخابی پریشانی

پاک صحافت سی این بی سی کے تازہ ترین سروے کے مطابق امریکی ووٹرز مہنگائی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے