پوتن

روسی صدر کو گرفتار کیا گیا تو ایٹمی ہولوکاسٹ ہو گا: دمتری میدویدیف

پاک صحافت روسی صدر کے قریبی ساتھی اور اس ملک کے سابق صدر دمتری مِداو دیو نے کہا کہ اگر ولادیمیر پوٹن کو گرفتار کرنے کی کوئی کوشش کی گئی تو دنیا میں ایٹمی ہولوکاسٹ ہو سکتا ہے۔

ادھر روسی صدر کے دفتر نے کہا ہے کہ عدالتی وارنٹ ایک جانبدارانہ فیصلہ ہے اور ہمارے لیے اس کی کوئی اہمیت نہیں۔

روسی حکام نے یوکرین کے جنگی جرائم کی سختی سے تردید کی ہے۔ یہ بھی دعویٰ کیا کہ مغربی ممالک نے یوکرین کے جنگی جرائم کو نظر انداز کیا ہے۔ بین الاقوامی فوجداری عدالت نے صدر ولادیمیر پیوٹن کو یوکرین میں جنگی جرائم کا ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

ادھر دمتری میدویدیف نے کہا کہ اگر پیوٹن کو گرفتار کرنے کی کوئی کوشش کی گئی تو اسے روس کے خلاف اعلان جنگ تصور کیا جائے گا۔ میدویدیف اس وقت روس کی طاقتور سلامتی کونسل کے نائب سربراہ ہیں۔

میدویدیف نے ٹیلی گرام پر جاری ایک ویڈیو میں کہا کہ اگر پیوٹن کو گرفتار کرنے کی کوشش کی گئی تو میزائلوں سے منہ موڑ دیا جائے گا۔ ایک بیان میں میدویدیف نے کہا کہ یوکرین کو ہر روز غیر ملکی ہتھیاروں کی سپلائی ایٹمی ہولوکاسٹ کا باعث بنے گی۔ اس سے قبل چینی صدر پیوٹن کے دورہ ماسکو کے دوران دونوں رہنماؤں نے مغربی ممالک کو سخت پیغام دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

مظاہرہ

رائے شماری کے نتائج کے مطابق: برطانوی عوام کی اکثریت اسرائیل پر ہتھیاروں کی پابندی اور غزہ میں جنگ بندی چاہتے ہیں

پاک صحافت انگلینڈ میں کئے گئے تازہ ترین سروے کے نتائج سے پتہ چلتا ہے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے