25.2 C
Pakistan
اتوار, مئی 16, 2021

برطانیہ میں پولیس کو زیادہ طاقت دینے والے بل کی سخت مخالفت، متعدد گرفتار

لندن {پاک صحافت} برطانیہ میں پولیس کو مضبوط بنانے کے ایک بل کی مخالفت میں مظاہرے شدت اختیار کر گئے ہیں۔ اس مسئلے پر ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل رہے ہیں۔

ہفتے کے روز لندن میں بھی وسیع پیمانے پر مظاہرے ہوئے۔ برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں ہی نہیں ، بلکہ اس ملک کے ہر کونے میں ، اس قانون کے خلاف مظاہرے کیے جارہے ہیں جو پولیس کو طاقت دیتا ہے۔ اس سلسلے میں 9 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

پولیس کو زیادہ طاقت دینے والے اس بل کی مخالفت کی جارہی ہے کیونکہ لوگوں کو خدشہ ہے کہ ان حقوق کو پامال کرکے عام لوگوں کو ہراساں کیا جاسکتا ہے۔ان مظاہروں کی خاص بات یہ ہے کہ انھیں ایک تنظیم نے منظم کیا تھا لیکن اس کا آغاز بہت سارے لوگوں کے ذریعہ کیا گیا ہے۔ انسانی حقوق کی تنظیمیں اور ذاتی طور پر سوشل میڈیا مہمات۔ لگ بھگ 600 تنظیموں نے حکومت سے اس بل کو واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ برطانیہ کی پارلیمنٹ نے پولیس ، کرائم ، سزا اور عدالت سے متعلق بل پیش کیا ہے۔ 300 صفحات پر مشتمل اس بل میں پولیس ، جرم اور سزا سے متعلق اہم تجاویز ہیں۔ ان میں متعدد سفارشات شامل ہیں جیسے سنگین جرائم کی سخت سے سخت سزا اور سزا ختم ہونے سے پہلے ہی جیل سے رہائی۔

موجودہ قانون میں پولیس اس وقت تک مظاہرے نہیں روک سکتی جب تک یہ ثابت نہ ہوجائے کہ املاک اور املاک کو خطرہ ہے ، لیکن نیا قانون پولیس کو خود فیصلہ کرنے کا اختیار دیتا ہے کہ مظاہرے میں کتنا خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔ پولیس کو وقت اور آواز کی حدیں طے کرنے کا بھی حق حاصل ہوگا۔ کسی یادگار یا مجسمے کو نقصان پہنچانے والوں کو 10 سال کی سزا کا بندوبست ہے۔

Related Articles

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

16 − 13 =

Latest Articles