کسی کے دباؤ میں آکر استعفیٰ نہیں دیں گے: شاہ محمود قریشی

او آئی سی اجلاس سے وزیر خارجہ کا خطاب، مقبوضہ کشمیر دنیا کی سب سے بڑی جیل

ملتان (پاک صحافت) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ کسی کے دباؤ میں آ کر ہم ہرگز استعفیٰ نہیں دیں گے ، ہم فیصلہ کرچکے ہیں، 31 جنوری تک وزیراعظم عمران خان کا استعفی نہیں آئے گا۔پی ڈی ایم کی ساڑھے 5 گھنٹے کی طویل نشست بے نتیجہ رہی، پوری قوم پی ڈی ایم کی حقیقت جان چکی ہے، احتجاج سے ہمیں کوئی خطرہ  نہیں ہے۔ادارے اپنی ذمہ داری نبھا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ملتان میں میڈیا سے گفتگو میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہم فیصلہ کرچکے ہیں کسی کے دبا ومیں آکر استعفی نہیں دینگے،31جنوری کو وزیراعظم کا استعفی نہیں آئے گا، پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم)کے کہنے پر یا ان کے دباؤ پر مستعفی نہیں ہوں گے، اداروں نے قانون کے مطابق ذمہ داریاں نبھانی ہیں۔

مزید پڑھیں: پورے پاکستان کی ایک ہی آواز ہے کہ عمران خان کو جانا چاہیئے: بلاول بھٹو

انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم 31 جنوری کا انتظار کیوں کر رہی ہے؟، ہمارے پاس عوام کا مینڈیٹ ہے، وزیرِ اعظم عمران خان کو ایوان کا اعتماد حاصل ہے، عمران خان پی ڈی ایم کے کہنے پر کیوں مستعفی ہوں گے؟ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پی ڈی ایم کی ساڑھے 5 گھنٹے کی طویل نشست بے نتیجہ رہی، پوری قوم پی ڈی ایم کی حقیقت جان چکی ہے۔ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم)کے احتجاج سے ہمیں کوئی ٹینشن نہیں اور نہ ہی اس سے ہم خطرہ محسوس کر رہے ہیں۔

انہوں نے اپوزیشن کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا  جو خود محتاج ہو وہ احتجاج کیا کرے گا؟، پی ڈی ایم قائدین نے پیپلزپارٹی سی ای سی کی توثیق کی۔ پی ڈی ایم سینیٹ کا الیکشن بھی لڑے گی۔ یہ سندھ کی حکومت نہیں چھوڑیں گے۔

 

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں