بحرین

بحرین، 4 مخالفین کو سزاے موت، دنیا ہے خاموش

پاک صحافت ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ بحرین کی حکومت نے 4 مظاہرین کو سزائے موت کا حکم دیا ہے۔

ہیومن رائٹس واچ اور بحرین سینٹر فار رائٹس اینڈ فریڈم نے اطلاع دی ہے کہ بحرین میں حکمراں خلافت کے 4 مخالفین کو موت کا حکم دیا گیا ہے۔

الجزیرہ کے مطابق ورلڈ ہیومن رائٹس واچ اور بحرین کے سینٹر فار رائٹس اینڈ فریڈمز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بحرین کی ایک عدالت نے حال ہی میں چار بحرینی مخالفین کو موت کی سزا سنائی ہے۔

انسانی حقوق کی ان تنظیموں نے بتایا ہے کہ دی گئی سزائیں ظالمانہ مقدمات اور تشدد کے تحت حاصل کیے گئے اعترافی بیان پر مبنی ہیں۔

ورلڈ ہیومن رائٹس واچ اور بحرین رائٹس اینڈ فریڈم سینٹر کے مشترکہ بیان میں امریکہ، انگلینڈ اور یورپی یونین کی حکومتوں سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ سزائے موت اور عدالتی خلاف ورزیوں کو روکنے کے لیے منامہ حکومت پر دباؤ ڈالیں۔

یہ بیانات ایک ایسے وقت میں جاری کیے گئے ہیں جب بحرینی حکومت پارلیمانی انتخابات کرانے کی تیاری کر رہی ہے اور بحرین کے بادشاہ حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ نے حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ ملک میں پارلیمانی انتخابات 12 نومبر کو ہوں گے۔ اپوزیشن جماعتوں نے اس الیکشن کا بڑے پیمانے پر بائیکاٹ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

صیھونی جنرل

صہیونی جنرل نے اسرائیلی حکومت کے سربراہوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا: غزہ کی پٹی چھوڑ دو

پاک صحافت صیہونی حکومت کے ایک سابق جنرل نے اس حکومت کے اہلکاروں سے کہا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے