اردن

اردن: اسرائیل خوراک اور ادویات کو فلسطینیوں کے خلاف ہتھیار کے طور پر استعمال کرتا ہے

پاک صحافت اردنی وزیر خارجہ نے کہا کہ صیہونی حکومت خوراک اور ادویات کو فلسطینیوں کے خلاف ہتھیار کے طور پر استعمال کرتی ہے۔

پاک صحافت کے مطابق اردن کے وزیر خارجہ ایمن الصفادی نے آج ایک تقریر میں کہا کہ صیہونی حکومت بین الاقوامی قوانین کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے فلسطینیوں کے خلاف خوراک اور ادویات کو بطور ہتھیار استعمال کر رہی ہے۔

اردن کے وزیر خارجہ نے کہا کہ اردن غزہ کو فضائی امداد سمیت ہر ممکن طریقے سے امداد فراہم کرتا ہے۔

صفادی نے واضح کیا کہ آنروا کے کردار کو نظر انداز یا تبدیل نہیں کیا جا سکتا، اور کوئی دوسرا فریق اس کردار کو ادا کرنے کی اہل نہیں ہے جو یہ ایجنسی غزہ میں ادا کر رہی ہے۔

قبل ازیں اردنی وزیر خارجہ نے کہا کہ صیہونی حکومت نے غزہ کی پٹی میں نسل کشی کی اور 23 لاکھ سے زائد فلسطینیوں کی زندگیاں تباہ کیں۔

الصفادی نے زور دے کر کہا کہ غزہ کی پٹی میں نصف ملین فلسطینی بھوک کی وجہ سے موت کے خطرے سے دوچار ہیں اور قحط کی بدترین حالت میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آبادکاروں کی جارحیت اور دہشت گردانہ اقدامات میں اضافہ ہو رہا ہے اور ان جرائم کا نشانہ بے گناہ فلسطینی ہیں اور صیہونی حکومت کو بین الاقوامی قوانین کی کوئی پرواہ نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں

امریکی صدور

سی این بی سی : “مہنگائی کا بحران”؛ ٹرمپ کے خلاف بائیڈن کی بڑی انتخابی پریشانی

پاک صحافت سی این بی سی کے تازہ ترین سروے کے مطابق امریکی ووٹرز مہنگائی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے