سیکھ

سکھ رہنما کے قتل کی کوشش پر ہندوستان اور امریکہ کے تعلقات مشکل وقت کی طرف بڑھ رہے ہیں

پاک صحافت بھارت اور امریکا کے درمیان کشیدگی کی صورتحال پیدا ہونے لگی، امریکا نے بھارت کو بتایا ہے کہ نیویارک میں اس کے ایک شہری اور علیحدگی پسند سکھ رہنما کو قتل کرنے کی کوشش کی گئی جو ناکام ہوگئی۔

اس معاملے میں نکھل گپتا نامی بھارتی شہری کو گرفتار کیا گیا ہے، جس پر الزام ہے کہ اس نے ایک لاکھ ڈالر کی رقم کے عوض سکھ رہنما کے قتل کی ذمہ داری ایک کرائے کے قاتل کو دی تھی۔

امریکی پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ کرائے کے قاتل جس سے نکھل گپتا یا نک نامی بھارتی شہری نے رابطہ کیا وہ دراصل امریکی وفاقی ایجنسی کا ایجنٹ تھا، اس لیے قتل کی سازش بے نقاب ہوئی۔

52 سالہ نکھل گپتا جمہوریہ چیک کی جیل میں قید ہیں اور انہیں امریکہ لے جانے کا عمل مکمل کیا جا رہا ہے۔ اگر ان پر لگائے گئے الزامات درست ثابت ہوئے تو انہیں بیس سال قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

الزام ہے کہ نکھل گپتا سے حکومت ہند کے ایک افسر نے رابطہ کیا تھا، لیکن اس افسر کا نام دستاویزات میں ظاہر نہیں کیا گیا ہے اور نہ ہی ان کے خلاف چارج شیٹ دائر کی گئی ہے۔

وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ اس نے مبینہ قتل کا معاملہ بھارت کے ساتھ اعلیٰ سطح پر اٹھایا ہے، جس سے بھارتی حکام نے حیرت اور تشویش کا اظہار کیا ہے۔

امریکی انتظامیہ کے ایک سینئر اہلکار نے بتایا کہ صدر بائیڈن اس معاملے کو لے کر اس قدر فکر مند ہو گئے کہ انہوں نے امریکی انٹیلی جنس افسران کی ایک ٹیم بھیجی جس پر مبنی سی آئی اے کے ڈائریکٹر ولیم برنز اور نیشنل انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر ایورل ہینز پر مشتمل ہے، بھارت سے بات چیت کے لیے۔

ہندوستانی حکومت، جسے کینیڈا سے ایسے ہی الزامات کا سامنا ہے، نے کہا ہے کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق بھارتی نژاد سکھ علیحدگی پسند رہنما گرپتونت سنگھ پنو کو قتل کرنے کی سازش کی گئی تھی جو امریکہ اور کینیڈا کی دوہری شہریت رکھتے ہیں اور امریکہ میں موجود سکھ علیحدگی پسند تنظیم کے رکن ہیں۔

پنوں اس منصوبے کو بھارت کی سرحد پار دہشت گردی قرار دیتے ہیں اور کہتے ہیں کہ جو بھی مجھے قتل کرنے کی سازش کر رہا تھا، وہ بھارتی سفارت کار ہو یا بھارتی ایجنسی را کا رکن، اسے قانون کا سامنا کرنا پڑے گا۔

اس سے قبل کینیڈین وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے ملکی پارلیمنٹ میں بیان دیتے ہوئے کینیڈین شہری سکھ رہنما کے قتل کا ذمہ دار بھارت کو ٹھہرایا تھا جس کے بعد دونوں ممالک کے تعلقات میں کافی تناؤ آیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

نیوزیلینڈ

نیوزی لینڈ نے اسرائیل کے جرائم سے منسلک حماس کے اثاثے منجمد کر دیے

پاک صحافت نیوزی لینڈ نے فلسطین کے خلاف مغربی پالیسیوں کے مطابق اور غزہ میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے