آیرلینڈ

آئرش نمائندہ: یورپی یونین صیہونی حکومت کے جرائم کے خلاف خاموش ہے

پاک صحافت یورپی پارلیمنٹ کے آئرش رکن نے صیہونی قبضے کے ہاتھوں فلسطینیوں کے گھروں کی تباہی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یورپی یونین ان جرائم کے سامنے خاموش ہے اور صیہونی حکومت کو اپنا دوست کہتی ہے۔

پاک صحافت کی رپورٹ کے مطابق مرکز اطلاعات فلسطین کا حوالہ دیتے ہوئے “کلیئر ڈیلی” نے یورپی یونین کے اجلاس میں اس بات پر زور دیا کہ صیہونی حکومت نے گزشتہ ماہ غزہ پر 5 روزہ حملوں کے دوران اس پٹی پر 232 بار بمباری کی جس کے دوران 10 شہری شہید اور 1100 زخمی ہوئے۔ لوگ بے گھر اور بے گھر بھی ہوئے۔

ڈیلی نے بتایا کہ 2008 سے اب تک غزہ اور مغربی کنارے میں 33 ہزار بچوں سمیت 150,000 سے زائد فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ یورپی یونین ان جرائم کے سامنے خاموش ہے اور صیہونی حکومت کو اپنا دوست کہتی ہے اور ہم فلسطینیوں کے لیے گھر اور اسکول بناتے ہیں لیکن یہ حکومت انہیں دوبارہ تباہ کر دیتی ہے۔

اس یورپی نمائندے نے زور دے کر کہا: “ہم اپنے آپ کو مخصوص اصولوں اور اقدار کا حامل نہیں سمجھ سکتے لیکن پھر بھی اسرائیل کو دوست اور اتحادی کہتے ہیں۔ اس معاملے کی تحقیق ہونی چاہیے۔”

کلیر ڈیلی نے مشرق وسطیٰ کے علاقے میں امریکہ، صیہونی حکومت اور یورپی یونین کی پالیسیوں پر بارہا تنقید کی۔

یہ بھی پڑھیں

نیو ورک

نیویارک پوسٹ: بائیڈن اٹلی میں “اپنی بدترین حالت میں” تھا

پاک صحافت نیویارک پوسٹ کی ویب سائٹ نے اطلاع دی ہے کہ امریکہ کے صدر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے