یوکرین پر روس کے ممکنہ حملے کے پیش نظر بدھ کو امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن یوکرین پہنچے

انٹونی بلنکن

واشنگٹن {پاک صحافت} امریکی وزیر خارجہ جمعے کو جنیوا میں اپنے روسی ہم منصب سے ملاقات کرنے جا رہے ہیں۔ ایسے خدشات پیدا ہو گئے ہیں کہ امریکہ ایک بار پھر روس کو خبردار کرنے جا رہا ہے کہ اگر اس نے کشیدگی کم نہ کی تو اسے مالی طور پر اس کے نتائج بھگتنا پڑیں گے۔

ساتھ ہی روس نے اس بات کی تردید کی ہے کہ اس کا یوکرین پر حملہ کرنے کا کوئی منصوبہ ہے۔ روس نے کہا ہے کہ اس کے ایک لاکھ سے زیادہ فوجی سرحد پر تعینات ہیں۔

یوکرین کے وزیر دفاع اولیکسی ریزنکوف نے مغربی ممالک کی حکومتوں پر زور دیا ہے کہ روس کو حملے سے روکنے کے لیے اس پر فوری پابندیاں لگائیں کیونکہ کوئی حملہ بہت مہنگا ثابت ہو سکتا ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ روس کا حملہ خونریزی کا باعث بنے گا اور یورپ میں مہاجرین کا بحران پیدا ہو سکتا ہے۔
یوکرین کے دارالحکومت کیف پہنچنے والے امریکی وزیر خارجہ بلنکن صدر ولادیمیر زیلینسکی سے بات چیت کریں گے تاہم اس سے قبل امریکی وزیر خارجہ اپنے برطانوی، جرمن اور فرانسیسی ہم منصبوں سے بات چیت کریں گے۔
منگل کو امریکی حکام نے کہا کہ روس "کسی بھی موقع پر” حملہ کر سکتا ہے۔

وائٹ ہاؤس کی پریس سیکرٹری جین ساکی نے صحافیوں کو بتایا کہ روس نے یوکرین کی سرحد کے قریب 100,000 سے زیادہ فوجیوں کو تعینات کیا ہے، جس سے "انتہائی خطرناک صورتحال” پیدا ہو گئی ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں