پاکستان

پاکستان کی پارلیمنٹ کے اسپیکر: ایران کی گیس پائپ لائن ہمارے لیے انتہائی اہمیت کی حامل ہے

پاک صحافت پاکستان کی پارلیمنٹ کے نئے اسپیکر نے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ دوطرفہ تعاون بالخصوص اقتصادی میدان میں فروغ دینے کے لیے پارلیمنٹ کی صلاحیت کو بروئے کار لانے پر تاکید کی اور کہا: ایران سے گیس ٹرانسمیشن پائپ لائن پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

اتوار کے روز پاک صحافت کے رپورٹر کی رپورٹ کے مطابق، سردار ایاز صادق نے اسلام آباد میں پاکستان میں ایران کے سفیر رضا امیری موغادم سے ملاقات کی اور دونوں فریقوں نے دو طرفہ تعلقات سے متعلق تازہ ترین پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا۔

ایرانی سفیر نے سردار ایاز صادق کو پاکستان کی پارلیمنٹ کا سپیکر منتخب ہونے پر مبارکباد دی اور امید ظاہر کی کہ ایاز صادق کے دور میں دونوں ممالک کے درمیان تعاون کی نئی راہیں کھلیں گی بالخصوص پارلیمانی سفارت کاری کے شعبے میں پاکستانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے ایران کے ساتھ جامع تعاون اور تعلقات پر زور دیا اور مزید کہا: دونوں ممالک کی پارلیمنٹ کی صلاحیتوں کو تجارتی حجم اور کھلے اقتصادی تعاون کو مضبوط بنانے میں مدد کے لیے استعمال کیا جانا چاہیے۔

انہوں نے علاقائی اور بین الاقوامی تجارت کو بڑھانے کے لیے ایران اور پاکستان کے جغرافیائی محل وقوع کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا: مشترکہ سرحدوں پر دوطرفہ تجارت کو مضبوط کرنا اور اقتصادی تعاون کو وسعت دینے کے لیے تکنیکی مسائل کو حل کرنا ناگزیر ہے۔

ایاز صادق نے مزید کہا کہ پاکستان ایران کے ساتھ اقتصادی تعاون کی مضبوطی، تجارتی وفود کے تبادلوں بالخصوص نجی اور سرکاری شعبوں کے درمیان رابطوں کا خیرمقدم کرتا ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ایران کے ساتھ گیس کا مشترکہ منصوبہ پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے بہت اہم سمجھا جاتا ہے۔

ایرانی سفیر نے پاکستان میں حالیہ انتخابات کے کامیاب انعقاد اور نئی حکومت کی تشکیل پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے پارلیمانی دوستی گروپوں کو فعال کرنے کے لیے اسلامی جمہوریہ ایران کی آمادگی کا بھی اعلان کیا، دونوں ممالک کی پارلیمانوں کے درمیان تعاون کو مزید اہمیت دی جائے گی۔ علاقائی اور بین الاقوامی فورمز، پارلیمانی سفارت کاری کو مضبوط بنانے اور وفود کے تبادلے کے لیے امیری مغدام نے اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر آیت اللہ سید ابراہیم رئیسی کے آئندہ دورہ پاکستان کو تجارتی اور اقتصادی شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو مضبوط بنانے میں مدد کے لیے اہم قرار دیا۔

انہوں نے اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے، دوطرفہ تجارت کے حجم میں اضافے، سرحدی تجارت میں اضافے، دوطرفہ تجارت بڑھانے کے لیے بینکنگ چینل کھولنے، ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے کو فعال کرنے اور دونوں ممالک کے نجی شعبوں کو فعال کرنے کے لیے پارلیمان کی صلاحیتوں کو بروئے کار لانے پر زور دیا۔

یہ بھی پڑھیں

نواز شریف

نوازشریف 5 روزہ دورے پر جاتی امراء سے چین کیلئے روانہ

لاہور (پاک صحافت) سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں محمد نواز شریف …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے