یمنی عوام کے خلاف لڑنے والے سعودی اتحاد کو شدید جھٹکا لگ گیا

یمنی عوام کے خلاف لڑنے والے سعودی اتحاد کو شدید جھٹکا لگ گیا

یمنی عوام کے خلاف لڑنے والے سعودی اتحاد کو اس وقت شدید جھٹکا لگا جب یمن کے مفرور صدر منصور ہادی سے منحرف ہونے والے سیکڑوں فوجی اور سیاستداں صنعا لوٹ آئے۔

اطلاعات کے مطابق، حال ہی میں سیکڑوں ایسے فوجی جو یمن کے مفرور صدر منصور سے وابستہ تھے، ایک بار پھر اپنے وطن میں لوٹ آئے ہیں۔

منصورہادی سے علیحدگی اختیارکر کے صنعا واپس لوٹ آنے کی خبر ایک ایسے وقت سامنے آئی ہے کہ جارح اتحادی افواج سے وابستہ دسیوں اعلی فوجی کمانڈر، سیاسیتدانوں، قبائلی اور پارٹی رہنماؤں نے سعودی اتحاد سے علیحدگی اختیار کرنے کا اعلان کیا ہے، یہ لوگ یمن کی قومی آشتی کی حکومت سے ملحق ہونے کا ارادہ رکھتے ہيں۔

عرب میڈيا کے مطابق سعودی اتحاد سے علیحدگی اختیار کرنے کا اقدام کوئی نیا نہیں ہے، یمن کی وزارت دفاع اس سے قبل بھی 300 سے زیادہ افراد کی وطن واپسی کی خبر جاری کر چکی ہے، جن میں چند جنرل، بریگيڈیر بھی شامل ہیں۔

بتایا جاتا ہے یمن کی عوامی حکومت نے وطن واپس آنے والے سیاستدانوں اور سرکاری اہلکاروں کے لئے عام معافی کا اعلان کر رکھا ہے اور ایسے تمام افراد کا خیرمقدم کرنے کے لئے تیار ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں