چینی صدر کا فوج کو اہم پیغام، ہر قسم کی ممکنہ جنگ کے لیئے تیار رہیں

چینی صدر کا فوج کو اہم پیغام، ہر قسم کی ممکنہ جنگ کے لیئے تیار رہیں

بیجنگ (پاک صحافت) چینی صدر ژی جنپنگ نے چین کی مسلح افواج کے اختیارات میں توسیع کرنے والی نئی ترمیمی قانون کے مد نظر فوج کو سخت نصیحت دیتے ہوئے کہا کہ وہ ہر گھڑی کسی بھی طرح کی جنگ اور کارروائی کرنے کے لیئے تیار رہے۔

سنہوا کی رپورٹ کے مطابق، ژی جنپنگ نے کہا کہ پیپلز لبریشن آرمی کو ہر لمحہ جنگ کے لئے تیار رہنا چاہئے، انہوں نے یہ بھی کہا کہ فوجی صلاحیت کو بڑھانے اور تربیت میں ٹکنالوجی کے استعمال کو بڑھانے کے لئے پیشگی محاذ آرائیوں کا استعمال کیا جانا چاہئے۔

سنٹرل ملٹری کمیشن (سی ایم سی)کے پہلے آرڈر میں جنپنگ نے فوجی قوت کی مضبوطی اور حقیقی جنگی حالات کے تحت تربیت حاصل کرکے جیتنے کی صلاحیت پر زور دیا، جنپنگ نے فوج سے کہا ہے کہ وہ اپنی جنگی صلاحیتوں کو مزید تیز کرنے کے لئے تربیت کو مستحکم کریں اور چوکس رہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ، سینٹرل ملٹری کمیشن (سی ایم سی)کے ساتھ ساتھ حکمراں چینی کمیونسٹ پارٹی (سی سی پی)کے سربراہ شی (67) نے 2021 کے لئے کمیشن کے پہلے حکم پر دستخط کیے جس میں پیپلز لبریشن آرمی(پی ایل اے)اور پیپلز آرمڈ پولیس فورس کی ترجیحات شامل ہیں، سی ایم سی 20 لاکھ فوجی جوانوں کی فوج کی ہائی کمان ہے، اس نئے حکم میں ، مسلح افواج کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ شی جنپنگ کی سوشلزم کے بارے میں سوچ کو اختیار کریں۔

چائنا ڈیلی کے مطابق ، سی سی پی فوج کی تربیت سے متعلق اپنی رہنمائی میں اضافہ کرے گا اور فوج سے بھی اپنی جنگی صلاحیتوں کو بہتر بنانے اور اپنے تربیتی نظام کو بہتر بنانے پر توجہ دینے کی تاکید کرے گا۔

اس طرح کا حکم جنوری 2018 میں جاری کیا گیا تھا، جنوبی چین مارننگ ماضی کے مطابق، جب جنپنگ نے شمالی چین میں شوٹنگ کے سلسلے میں ایک بڑے تربیتی پروگرام سے خطاب کیا تھا تب یہ جکم نامہ جاری کیا تھا۔

شی 2012 کے آخر میں کمانڈر انچیف بنے تھے اور اس کے بعد سے انہوں نے بار بار مسلح افواج کو جنگی تیاریوں کی تربیت اور مشترکہ کارروائیوں کی اہمیت پر زور دیا ہے،یہ سال 2021 چوتھا مسلسل سال ہے جب شی نے مرکزی فوجی کمیشن کی جانب سے خدمات انجام دیں، سال کی پہلی ہدایت کے طور پر فوج کے لئے تربیتی آرڈر جاری کیا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں