جنگ

یورپ انتہا پسندی کی طرف، لاطینی امریکہ اسرائیل پر پابندی لگانے کی کوشش میں / گزشتہ ہفتے دنیا کے اہم واقعات پر ایک نظر

پاک صحافت یورپ میں پارلیمانی انتخابات کا انعقاد، صہیونی حکومت کی جنگی کابینہ کے رکن بینی گینٹز کا استعفی، کولمبیا کی جانب سے اسرائیل کا تجارتی بائیکاٹ گزشتہ ہفتے کی دنیا کی اہم خبریں تھیں۔

صیہونی حکومت کی جنگی کابینہ کے رکن بینی گینٹز نے باضابطہ طور پر مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے فوری انتخابات کا مطالبہ کیا ہے۔ العالم ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق صیہونی حکومت کی جنگی کابینہ کے رکن بینی گانٹز نے اپنے استعفیٰ خط میں اسرائیلی وزیر اعظم بنیامین نیتن یاہو کو غزہ جنگ میں فتح کی راہ میں رکاوٹ قرار دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ اس کی وجہ ان کی غزہ کی فتح ہے۔ جنگی کابینہ میں موجودگی سیاسی شراکت داری نہیں تھی۔

جنگی کابینہ کے رکن نے کہا کہ جنگی کابینہ چھوڑنے کا فیصلہ سخت اور تکلیف دہ ہے۔ انہوں نے نیتن یاہو سے جلد از جلد انتخابات کے انعقاد اور تحقیقاتی کمیٹی بلانے کی جانب قدم اٹھانے کا بھی مطالبہ کیا۔

یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات

یورپ میں پارلیمانی انتخابات ہوئے۔ یہ انتخابات برطانیہ کے یورپی یونین سے نکلنے کے بعد ہونے والے پہلے انتخابات تھے۔

اعلان کردہ نتائج کے مطابق ان انتخابات میں 59/51 افراد نے حصہ لیا جو کہ گزشتہ انتخابات کے مقابلے اس الیکشن میں زیادہ لوگوں کی شرکت تھی۔

اسی طرح جن انتخابی نتائج کا اعلان کیا گیا ہے ان سے ظاہر ہوتا ہے کہ ان انتخابات میں دائیں بازو کی اور پاپولسٹ جماعتیں کامیاب ہوئی ہیں جبکہ یورپ کی ECR پارٹی 131 نشستیں حاصل کر کے تیسرے نمبر پر رہی ہے اور ID پارٹی نے 139 اور S@D پارٹی نے 184 نشستیں حاصل کی ہیں۔ نشستیں

ان تبدیلیوں کے پیش نظر یہ کہا جا سکتا ہے کہ یورپی پارلیمنٹ میں طاقت کا توازن دائیں بازو کی قوتوں کے حق میں رہا ہے۔ اسی طرح ان انتخابات میں بائیں بازو کی جماعتوں اور اتحادوں کو بہت سی نشستوں کا نقصان ہوا اور اس وقت ان کے پاس صرف 54 فیصد نشستیں ہیں جو کہ قطعی اکثریت حاصل کرنے کے لیے کافی نہیں ہیں۔

فرانس میں پارلیمنٹ تحلیل کر دی گئی

یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں بھاری شکست کے بعد فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے ملک کی پارلیمنٹ تحلیل کرتے ہوئے وسط مدتی انتخابات کا حکم دے دیا۔

فرانس میں پولنگ سٹیشنوں سے واپس آنے والے ووٹروں کے جائزوں اور رویوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ دائیں بازو کی “میٹنگ آف اسمبلی پارٹی” نے 5/31 فیصد اور رینیسنس پارٹی نے صرف 2/15 ووٹ حاصل کیے۔

فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے نیشنل پارٹی کی جیت کے ردعمل میں فرانس میں امن اور ہم آہنگی پر زور دیا۔

کلاڈیا شین بام میکسیکو کی پہلی خاتون صدر ہیں

میکسیکو کے الیکشن کمیشن کے اعلان کے مطابق کلاڈیا شائنبام سب سے زیادہ ووٹ حاصل کر کے اس ملک کی صدر منتخب ہو گئی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ میکسیکو کے الیکشن کمیشن نے کلاڈیا شائنبیم کی جیت کا باضابطہ اعلان کردیا ہے اور یہ بھی اعلان کیا ہے کہ کلاڈیا شائنبیم میکسیکو کی پہلی خاتون صدر بن گئی ہیں۔

ایک ماحولیاتی محقق ہیں اور میکسیکو کی جمہوری تاریخ میں سب سے زیادہ ووٹ حاصل کیے، تقریباً 58 سے 60 فیصد۔

لاطینی امریکہ کا اسرائیل کا پہلا تجارتی بائیکاٹ

کولمبیا کی حکومت نے سفارتی حدود سے تجاوز کرتے ہوئے اسرائیل کو پتھر کے کوئلے کی برآمد روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان کے اس اقدام کا مقصد اسرائیل پر غزہ جنگ کے خاتمے کے لیے دباؤ ڈالنا ہے۔ یہ کسی لاطینی امریکی ملک کی طرف سے اسرائیل کا پہلا تجارتی بائیکاٹ ہے۔

خبر رساں ایجنسی پاک صحافت نے اخبار الپیس کے حوالے سے رپورٹ دی ہے کہ کولمبیا کی وزارت تجارت و تجارت کے جاری کردہ حکم نامے کے مطابق اس ملک کی حکومت نے صیہونی حکومت کو پتھر کے کوئلے کی برآمدات روکنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس فیصلے کا مقصد یہ ہے۔ صیہونی حکومت پر غزہ جنگ کے خاتمے کے لیے دباؤ ڈالیں۔

اس فیصلے کو وزارت خارجہ، وزارت خزانہ اور کولمبیا کی وزارت توانائی کی حمایت بھی حاصل ہے اور اس ملک کے صدر کے دستخط کے بعد اس پر عمل درآمد کیا جائے گا۔

امریکہ اور میکسیکو کی سرحد پر محدود تعداد میں پناہ گزینوں کو قبول کیا جائے گا

امریکی صدر جو بائیڈن نے ایک حکم نامے پر دستخط کیے ہیں جس کے تحت امریکا اور میکسیکو کی سرحد پر امریکا میں پناہ حاصل کرنے والے افراد کی تعداد کو مزید محدود کردیا جائے گا۔

وائٹ ہاؤس کے اعلامیے کے مطابق امریکی صدر کا خیال ہے کہ امریکا کو اپنی سرحد کو محفوظ بنانا چاہیے۔ اس حکم نامے کے مطابق جب میکسیکو سے امریکہ میں داخل ہونے والے پناہ گزینوں کی اوسط تعداد روزانہ 2500 تک پہنچ جائے گی تو امریکہ میں پناہ کے متلاشیوں کا عمل روک دیا جائے گا اور پناہ کے متلاشیوں کے امریکہ میں داخل ہونے پر ہی امریکی سرحد کھول دی جائے گی۔ لوگوں کی تعداد 2500 سے کم ہو کر 1500 ہو جائے گی۔

یہ حکم غیر قانونی طور پر امریکہ میں داخل ہونے والے مہاجرین کے داخلے کو روک دے گا۔

یہ بھی پڑھیں

اطالوی وزیراعظم

اسرائیل حماس کے جال میں پھنس رہا ہے۔ اطالوی وزیراعظم

(پاک صحافت) اطالوی وزیراعظم جارجیا میلونی نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ اسرائیل حماس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے