ایف بی آئی نے ڈونلڈ ارمپ کے گھر پر چھاپہ مارا

ٹرمپ

واشنگٹن {پاک صحافت} سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ان کے فلوریڈا کے گھر پر امریکی ایجنسی ایف بی آئی نے چھاپہ مارا اور اس کے افسران نے تلاشی کے دوران گھر میں موجود ایک سیف کو بھی توڑ دیا۔

سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بیان میں کہا کہ ایف بی آئی کے ملازمین کی بڑی تعداد نے ان کی پام بیچ رہائش گاہ مار اے لاگو کو گھیرے میں لے لیا۔ کہا جاتا ہے کہ یہ تلاش ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے سرکاری کاغذات کے مبینہ استعمال کی تحقیقات سے منسلک ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے 2024 کے ممکنہ انتخابات میں حصہ لینے کی تیاری کرتے ہوئے ان کے خلاف تحقیقاتی ایجنسیوں کی سرگرمی میں اضافہ ہوا ہے۔

امریکی ٹی وی چینل سی این این کے مطابق پیر کو چھاپے کے وقت ڈونلڈ ٹرمپ نیویارک کے ٹرمپ ٹاور میں موجود تھے۔

اپنے بیان میں سابق صدر نے ایف بی آئی کے چھاپے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہماری قوم کے لیے یوم سیاہ ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے تمام سرکاری اداروں سے مکمل تعاون کیا ہے اس لیے ان کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارنا غیر قانونی ہے۔

ٹرمپ نے کہا کہ یہ استغاثہ کی بدانتظامی اور انصاف کے نظام کو ہتھیار بنانے کے مترادف ہے تاکہ انہیں وائٹ ہاؤس میں دوبارہ انتخاب سے روکا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اس قسم کا حملہ صرف تیسری دنیا کے ٹوٹے ہوئے ممالک میں ہو سکتا ہے، افسوس کی بات ہے کہ اب امریکہ بھی ان میں شامل ہو گیا ہے۔

گزشتہ فروری میں، نیشنل آرکائیوز نے محکمہ انصاف سے کہا کہ وہ ٹرمپ کے سرکاری کاغذات کو سنبھالنے کی تحقیقات کرے۔ امریکی نیشنل آرکائیوز کا کہنا ہے کہ اس نے ٹرمپ کی رہائش گاہ مار ای لاگو سے کچھ انٹیلی جنس ریکارڈز پر مشتمل 15 چیسٹیں ضبط کر لی ہیں۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں