چین کا امریکہ سے مطالبہ اب تو افغانستان کے لوگوں کو ان کا پیسہ دو

ژانگ جون

بیجنگ {پاک صحافت} اقوام متحدہ میں چین کے مستقل نمائندے نے افغانستان کی امریکہ سے روکی ہوئی رقم واپس کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

افغانستان میں حال ہی میں شدید زلزلہ آیا ہے جس سے بڑے پیمانے پر نقصان ہوا ہے۔ وہاں کے حالات بہت خراب ہیں۔ جنوب مشرقی افغانستان میں زلزلے سے بڑی تعداد میں لوگ ہلاک ہو گئے ہیں۔ اس زلزلے میں زخمی ہونے والوں کی تعداد بھی بہت زیادہ بتائی جاتی ہے۔

ادھر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں چین کے نمائندے ژانگ جون نے افغانستان میں جاری انسانی بحران کی طرف اشارہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان حالات میں افغانستان کو پہلے سے زیادہ مدد کی ضرورت ہے۔

چین کے نمائندے نے کہا کہ ان حالات میں امریکا کو فوری طور پر افغانستان کے اثاثوں کو آزاد کرنا چاہیے جو اس نے روک رکھے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ وقت افغانستان کے لوگوں کی مدد کا ہے، ان کے پیسے روکنے کا نہیں۔

قابل ذکر ہے کہ بدھ کے روز افغانستان میں گزشتہ دو دہائیوں کا بدترین زلزلہ آیا تھا، جس میں 1500 افراد ہلاک، 3000 مکانات تباہ اور 2000 افراد زخمی ہوئے تھے۔ 6.1 شدت کے اس زلزلے سے 10 ہزار سے زائد مکانات کو جزوی نقصان پہنچا۔ اس شدید زلزلے کے باعث کئی لوگ مکانات کے ملبے تلے دب گئے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں